زرعی تحقیقاتی ادارہ برائے مشینی کاشت میں کرپشن کیخلاف لیبر یونین کا احتجاج

زرعی تحقیقاتی ادارہ برائے مشینی کاشت میں کرپشن کیخلاف لیبر یونین کا احتجاج

ملتان(سپیشل رپورٹر)لیبریونین زرعی تحقیقاتی ادارہ برائے مشینی کاشت ایمری ملتان کے زیر اہتمام ادارہ میں ہونے والی کرپشن،بدعنوانی،لاقا نونیت کے خلاف احتجاج کیا گیا۔اس (بقیہ نمبر40صفحہ7پر )

موقع پر خطاب کرتے ہوئے شرکاء نے کہا کہ کرپشن نے ادارہ کی پراگریس اور کارکردگی کو ختم کرکے رکھ دیا ہے سرکاری گاڑیاں ذاتی استعمال میں ہیں اور بوگس طریقہ سے دورے ظاہر کرکے پٹرول اور ٹی اے ڈی اے کی مد میں لاکھوں روپے کا سرکاری خزانے کو نقصان پہنچایا جارہا ہے۔سرکاری ملازمین سے سرکاری ڈیوٹی لینے کی بجائے گھروں میں گھریلو ملازم کی طرح ڈیوٹی لی جارہی ہے۔ڈپلومہ ہولڈر انجینئرز کو اہم اور منافع بخش سیٹوں پر طویل عرصہ سے لگایا ہوا ہے جن کو جدید ریسرچ کے حوالے سے کوئی معلومات نہیں جبکہ گریجوایٹ،ماسٹر اور ایم فل فابل انجینئرز کو کھڈے لائن لگایا ہوا ہے۔ایمری میں ہونے والی میگا کرپشن کے ثبوت اعلیٰ حکام کو دئیے گئے مگر ان پر کارروائی کی بجائے کرپشن کی نشاندہی کرنے پر لیبر یونین کے عہدہ داران کے خلاف انتظامی کاررائیاں شروع کردی گئی ہیں۔ریفرنڈم میں انتظامیہ اپنی پاکٹ یونین کو کامیاب کروانے کیلئے کھلے عام مداخلت کررہی ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب،وزیر زراعت سیکرٹری زراعت فوری طور پر کارروائی کریں۔مظاہرہ میں مصور نقوی،غازی احمد حسن کھوکھر،رانا محمد اقبال نونی،محمد اشرف ،سعید احمد ساجد اعوان،چوہدری ظہور ایڈووکیٹ،شیخ شاہد حسین،مطلوب بخاری،عابدہ بخاری،مخدوم اظہر گیلانی،ظفر بلوچ،چوہدری شوکت علی ودیگر شریک تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر