ٹیکسلا ، ایک ہی خاندان کے 6افراد کی نماز جنازہ ادا : رقت آمیز مناظر

ٹیکسلا ، ایک ہی خاندان کے 6افراد کی نماز جنازہ ادا : رقت آمیز مناظر

 ٹیکسلا(طاہر فریدون)لوسرشرفو کے علاقے میں بھانجے کے ہاتھوں قتل ہونیوالے ایک ہی خاندان کے6افرادکی نماز جنازہ اداکردی گئی،رقت آمیز مناظر دیکھنے کو نظرآئے علاقے میں ہرآنکھ اشکبار تھی،قدرت کا فیصلہ معصوم بچی سمیت چھ افراد کا قاتل پنڈی بھٹیاں کے قریب ٹریفک حادثہ کا شکار ہو کر اپنے انجام کو پہنچ گیا،قتل ہونے والے افراد کاپوسٹمارٹم ہونے سے قبل ہی قاتل بھی دنیا سے چل بسا ،اب پولیس کیلئے ہلاک ہونے والا قاتل ایک سوالیہ نشان چھوڑ گیا ۔پولیس نے حمزہ ولد لیاقت عمر بیس سال کے خلاف مقدمہ تو درج کر دیا مگر وہ اس دنیا فانی سے چل بسا۔تفصیلات کے مطابق لوسر شرفو میں بھانجے نے اپنی خالہ کے خاندان کا نام و نشان مٹانے کے لئے6افراد کو بیدردی سے قتل کیا مگر ملزم کی خالہ فوزیہ بی بی کا وارث بیٹااس کے چنگل سے بچ گیا بچہ سکول پہنچ چکا تھا اور ملزم بیس سالہ حمزہ خود بھی اس دنیا فانی سے چلا گیا اس کے ہلاک ہونے کی خبر جب پنڈی بھٹیاں سے علاقہ میں پہنچی تو اہل علاقہ قدرت کے انتقام پر دم بخود رہ گئے،چھ افرادکاقاتل جواں سال بیٹا بوڑھے باپ کو تنہا چھوڑ کر دنیا سے رخصت ہو گیا معصوم بچی سمیت چھ افراد کی نماز جنازہ جب لوسر شرفو میں ادا کی گئی تو علاقہ بھر کی فضاء سوگوارہو گئی اور خوف وہراس پھیلا ہوا تھا ہر فرد کی آنکھیں اشکبار تھی۔تھانہ صدر پولیس کے ایس ایچ او یاسر مطلوب کیانی اور نامور تفتیشی افسران ملزم کے خلاف درج کر چکے تھے مگر تفتیش ایک سوالیہ نشان بن گئی کیونکہ قاتل خون کی ہولی کھیلنے کے بعدخود بھی حادثہ کا شکار ہو کر دنیا سے چلا گیا اور پولیس کے لئے مقدمہ کی تفتیش ایک معمہ بن گئی ۔ملزم سفید رنگ کی XLI 7570 ماڈل 2005 جو کہ رینٹ پر ہائر کی گئی تھی میں سوار ہو کر پولیس سے فرار کی کوشش میں اوور سپیڈنگ کی وجہ سے پنڈی بھٹیاں کے قریب بے قابو ہو کر گہری کھائی میں جا گری اور ملزم ہسپتال جاتے ہوئے راستہ میں دم توڑ گیاملزم حمزہ لیاقت کا نماز جنازہ آج سہ پہر تین بجے اس کے آبائی قبرستان لوسر شرفو میں ادا کر دیا گیا جبکہ پنڈی بھٹیان میں ملزم کے خلاف تیز رفتاری اور لاپرواہی کی بنا پر 279/PPC کے تحت مقدمہ درج کر دیا گیا ۔

مزید : کراچی صفحہ اول