مردان میں سرکاری ہسپتالوں کے درجہ چہارم ملازمین کا بائیکاٹ ودھرنا

مردان میں سرکاری ہسپتالوں کے درجہ چہارم ملازمین کا بائیکاٹ ودھرنا

مردان (بیورورپورٹ )سرکاری ہسپتالوں کے در جہ چہا رم کے مرد وخواتین ملازمین نے ہیلتھ پر وفیشنل الاؤ نس نہ ملنے کے خلا ف او پی ڈیز سے بائیکاٹ کرکے احتجا جی دھرنا دیا دھر نے میں خواتین ملا زمین نے بھی حصہ لیا ۔ مظا ہر ین نے مردان پر یس کلب کے سامنے روڈ کو ٹر یفک کے لئے بند کر دیا اس موقع پر پیرامیڈیکل درچہ چہارم کے ڈویژنل صدرعالمزیب اوردیگر عہدیداروں سر تا ج ما یار، غنی الرحمن ،نصیر احمد اورقیوم خان نے کہاکہ صوبا ئی وزیر ہیلتھ شہرام تر کئی نے پشاورمیں ہزاروں ملازمین سے ہیلتھ الا ؤنس کی منظوری کا اعلان کیا تھا اور ابھی وزیر مو صوف کہہ رہے ہیں کہ الاؤنس کے لئے خزانے میں بجٹ نہیں ہے۔ انہو ں نے کہا کہ صو با ئی اسمبلی میں ایم پی ایز کے تنخواہوں میں اضا فے کی جب با ت ہو ئی تو ان کو فو ری طور پر منظور کیا گیاان کے لئے اس وقت تو خزانہ حا لی نہیں تھامگر غریب ملا زمین سے مذاق کیا جا رہا ہے جو کسی صورت بر داشت نہیں کی جا ئے گی ۔ان کا کہنا تھا کہ دو دن تک ہسپتا لو ں میں او پی ڈی کو احتجاجاََبند کر دیا گیا ہے صو با ئی حکو مت نے اپنا وعدہ پورا نہیں کیا تو ہسپتا لو ں کا مکمل با ئیکا ٹ کر کے پو رے صوبے میں احتجا جی مظا ہر یں شروع کر یں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر