بے بنیادالزامات پرصحافی اسد کھرل کے وارنٹ گرفتاری جاری

بے بنیادالزامات پرصحافی اسد کھرل کے وارنٹ گرفتاری جاری
بے بنیادالزامات پرصحافی اسد کھرل کے وارنٹ گرفتاری جاری

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (ویب ڈیسک ) ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جنوبی غلام مصطفی لغاری نے ایک نجی بینک کی شکایت پر اے آر وائی نیوز کے اینکر سلیمان مرزا ، انویسٹی گیشن انچارج اسد کھرل اور کراچی سٹاک ایکسچینج کے ڈائریکٹر عقیل کریم ڈھیڈی کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ۔

تفصیلات کے مطابق ایک نجی بینک کے مجاز افسر اشرف شہزاد احمدملزمان کے خلاف ضابطہ فوجداری ایکٹ کی دفعہ 200 بشمول دفعات 500،501 ، 502، 34 کے تحت جوڈیشل مجسٹریٹ جنوبی vii کی عدالت میںدرخواست دائر کی تھی جس پر یکم اکتوبر 2016 کو فاضل مجسٹریٹ نے معاملہ معزز ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جنوبی کوریفر کیا۔ بعدازاں یہ درخواست اس عدالت (ایڈیشنل سیشن جج جنوبی ) کو 3 اکتوبر 2016 کو سیشن جج کی عدالت سے موصول ہوئی۔ 15 اکتوبر 2016 کو عدالت نے مجاز افسر اشرف شہزاد احمد کا بیان قلمبند کیا اور ابتدائی انکوائری کا حکم جاری کیا۔ اس حکم میں مدعی کو بھی ہدایات دی گئیں کہ وہ اپنے گواہان کے بیانات مذکورہ مجسٹریٹ جنوبی کے روبرو ریکارڈ کرائیں اور مجسٹریٹ کو ہدایت کی گئی کہ وہ ایک ماہ میں اپنی رپورٹ جمع کرائے۔ بعدازاں فاضل مجسٹریٹ نے دو گواہوں کے بیانات قلمبند کرنے کے بعد اپنی تفصیلی انکوائری رپورٹ یکم نومبر 2016 کو جمع کرائی۔

روزنامہ جنگ کے مطابق مدعی کے وکیل کے دلائل کی سماعت اور تمام ریکارڈ کے ملاحظے کے بعد عدالت نے اپنی آبزرویشن میں کہا کہ بادی النظر میں مقدمہ درج بالا ملزمان کے خلاف زیر دفعہ 500، 501 ،502 ، 34 کے تحت بنایا گیا ، لہٰذا مدعا علیہان/ ملزمان کے فی کس 50 ہزار روپے کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے جاتے ہیں۔

مزید : کراچی