”بہت مزا آ رہا ہے، وی آر پراﺅڈ آف یو“سیر کرنے مری گئی اس لڑکی کا ٹی وی پر یہ جملہ وائرل ہو گیا، پاکستانیوں نے اس کا خوب مزاق اڑایا لیکن پھر اس کے ساتھ کیا ہوا؟ جان کر ہر پاکستانی کا سر شرم سے جھک جائے گا

”بہت مزا آ رہا ہے، وی آر پراﺅڈ آف یو“سیر کرنے مری گئی اس لڑکی کا ٹی وی پر یہ ...
”بہت مزا آ رہا ہے، وی آر پراﺅڈ آف یو“سیر کرنے مری گئی اس لڑکی کا ٹی وی پر یہ جملہ وائرل ہو گیا، پاکستانیوں نے اس کا خوب مزاق اڑایا لیکن پھر اس کے ساتھ کیا ہوا؟ جان کر ہر پاکستانی کا سر شرم سے جھک جائے گا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سوشل میڈیا کی طاقت سے کوئی انکار نہیں کر سکتا جو راتوں رات کسی کو شہرت کی بلندیوں پر پہنچانے کی سکت رکھتا ہے تو اس کے منفی استعمال کے باعث کسی کی زندگی بھی خراب ہو سکتی ہے۔ ایسا ہی کچھ لاہور کے ایک کالج کی نوجوان لڑکی کے ساتھ ہوا جسے گھبراہٹ میں بولے گئے چند بے ضرر الفاظ کے باعث اتنی شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا کہ بے چاری اب کالج جانے سے بھی گریزاں ہے اور اپنی زندگی سے ہی بیزار دکھائی دیتی ہے۔

نشتر کالونی کے سکول میں بھینسا گھس آیا ، 5بچے زخمی

چند روز قبل ایسپائر کالج کی ایک طالبہ کالج ٹرپ پر مری میں موجود تھی اور اپنی دوستوں کے ساتھ ٹھنڈے موسم کا لطف اٹھا رہی تھی کہ اسی دوران ایک نجی ٹی وی کا اینکر وہاں پہنچ گیا اور مری کے دورہ کے حوالے سے ان کے تجربات پوچھنے لگا۔ اس دوران ایک لڑکی اتنی زیادہ خوش تھی اور یقینا ٹی وی سکرین پر پہلی بار آنے کے باعث انتہائی پرجوش تھی جس کے باعث وہ گھبراہٹ کا شکار ہو گئی اور اینکر کی جانب سے پوچھے گئے سوال پر کہہ دیا کہ ”بہت مزہ آ رہا ہے، وی آر پراﺅڈ آف یو“ (بہت مزہ آ رہا ہے، ہمیں آپ پر فخر ہے) مذکورہ اینکر نے اس ویڈیو کو اپنے فیس بک پیج پر اپ لوڈ کر دیا (جو اب ہٹائی جا چکی ہے) اور اس میں کچھ ایسے افیکٹ بھی لگائے کہ اس لڑکی کا جملہ نمایاں ہو گیا۔ یہ ویڈیو دیکھتے ہی دیکھتے جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی اور ہزاروں لوگوں کی جانب سے اسے شیئر کرایا جانے لگا اور لوگ اس لڑکی کا مزاق اڑاتے رہے جس نے کہا تھا کہ ”وی آر پراﺅڈ آف یو۔“

کچھ لوگوں نے اس کے ادا کئے جملے کا مذاق اڑایا تو کچھ لوگوں نے ناقص انگلش بول چال پر اس کا مذاق بنانے کی کوشش کی۔ لیکن آج صبح سوشل میڈیا پر ایک پیغام بہت زیادہ گردش کر رہا ہے جسے پڑھ کر ہم انتہائی افسردہ اور شرمندہ ہوئے اور یقینا اسے پڑھ کر آپ کا سر بھی شرم سے جھک جائے گا۔

پانچ لاکھ کا نایاب کبوتر چوری

پیغام کچھ یوں ہے کہ ”میں نے سر سے اس لڑکی کے بارے میں پوچھا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ ٹرپ کے بعد ایک دن بھی کالج نہیں آئی۔ انہوں نے اس لڑکی کی دوست سے بھی اس کے بارے میں پوچھا جس نے بتایا کہ جب اس نے آخری مرتبہ اس سے بات کی تو وہ بہت زیادہ رو رہی تھی اور مسلسل یہ کہہ رہی تھی کہ وہ کبھی بھی دنیا کا سامنا نہیں کر سکتی اور اب وہ مر جانا چاہتی ہے۔ وہ صرف اور صرف یہ کہنا چاہتی تھی کہ اسے اپنے اساتذہ اور کالج پر فخر ہے لیکن وہ بہت زیادہ خوش ہونے کے باعث گھبراہٹ کا شکار ہو گئی۔ اس کی دوست کا کہنا تھا کہ میری خواہش ہے کہ جس طرح اس کا مذاق اڑایا جا رہا ہے دوسروں کے ساتھ بھی ایسا ہی ہو، مجھے اس کیلئے بہت ہی زیادہ افسوس ہو رہا ہے اور مجھے یقین ہے کہ اس کا اعتماد تمام عمر کیلئے ختم ہو چکا ہے۔“

ہمیں سوشل میڈیا صارف ہونے کے ناطے یہ بھول چکے ہیں کہ ہماری ایک حرکت سے کوئی کہاں تک پہنچ سکتا ہے۔ اگر سوشل میڈیا صارف ہونے کے ناطے ہم ایک چائے والے کو راتوں رات شہرت کی بلندیوں پر پہنچا سکتے ہیں تو کسی کی زندگی کو تباہ بھی کر سکتے ہیں۔ اس سب سے ہٹ کر کہ ہماری نیت کیا تھی، اس لڑکی کا اعتماد بری طرح تباہ ہوا ہے، ایک ایسی لڑکی جو 20 سال سے زیادہ بڑی نہیں ہے۔

اس تمام معاملے کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک مشہور ریپر سنی خان درانی نے بھی ایک ویڈیو اپ لوڈ کی جس میں اس نے اس معاملے پر گفتگو کرتے ہوئے اسے افسوسناک قرار دیا۔ سنی خان درانی نے مزید کیا کہا وہ آپ ذیل میں دی گئی ویڈیو میں دیکھ سکتے ہیں لیکن یہ خبر پڑھنے کے بعد آج آپ خود سے یہ عہد کر لیں کہ کسی کا بھی مذاق اڑانے سے پہلے 100 بار سوچیں گے اور اس بات کو مدنظر رکھیں گے کہ آپ کا ایک جملہ کسی کی پوری زندگی برباد کر سکتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس