چین اپنا سب سے خطرناک ہتھیار منظر عام پر لے آیا جو بیک وقت 12 میزائل۔۔۔ امریکہ کی نیندیں اُڑ گئیں

چین اپنا سب سے خطرناک ہتھیار منظر عام پر لے آیا جو بیک وقت 12 میزائل۔۔۔ امریکہ ...
 چین اپنا سب سے خطرناک ہتھیار منظر عام پر لے آیا جو بیک وقت 12 میزائل۔۔۔ امریکہ کی نیندیں اُڑ گئیں

  

یجنگ (نیوزڈیسک ) بحیرہ جنوبی چین کے علاقے میں بار بار مداخلت کر کے چین کو اشتعال دلانے والے امریکہ کو شائد اب دوبارہ یہ حرکت کرنے کی کبھی جرات نہ ہو کیونکہ چین کا ایک ایسا ہتھیار منظر عام پر آ گیا ہے کہ جس کا تصور کر کے ہی ہر دشمن کانپ اٹھا ہے۔ 

اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق چین کا یہ ہیبت ناک ہتھیار خفیہ ایٹمی آبدوزیں ہیں، جن میں سے ہر ایک 12 بین البراعظمی ایٹمی میزائلوں سے لیس ہے۔ جین 094Aنامی آبدوز پر نصب میزائل 11 ہزار کلومیٹر سے زائد دوری پر واقع اہداف کو بھی غیر معمولی درستی کے ساتھ نشانہ بنا کر آن واحد میں بھسم کر سکتے ہیں۔

حال ہی میں سامنے آنیوالی ان آبدوزوں کی تصاویر نے دنیا بھر کے دفاعی ماہرین کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ یہ آبدوزیں اپنی خوفناک صلاحیتوں کی وجہ سے ہی منفرد نہیں ہیں بلکہ ان کا ڈیزائن بھی دنیا بھر کی آبدوزوں سے منفرد ہے۔ رپورٹ کے مطابق عام آبدوزوں کے برعکس یہ خاصی لمبوتری ہیں اور ان کے اوپر روایتی ٹاور کے ساتھ ایک اضافی ا سٹرکچر بھی بنایا گیا ہے جو ان کی شکل کو عام آبدوزوں سے بالکل مختلف بناتا ہے۔

امریکی دفاعی ماہرین نے اپنی حکومت کو خبردار کر دیا ہے کہ ان آبدوزوں پر نصب کئے گئے میزائلوں کی رینج اتنی زیادہ ہے کہ یہ چین کے حینان جزیرے کے بحری اڈے سے نکلے بغیر ہی امریکہ کے ہر کونے کو نشانہ بنا سکتی ہیں۔

دفاعی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اس ہتھیار کے سامنے آنے کے بعد دنیا میں طاقت کا منظر نامہ بالکل بدل گیا ہے۔ اب امریکہ کیلئے ممکن نہیں رہا کہ یہ چین پر کوئی بڑا حملہ کرے اور اسے خوفناک نتائج نہ دیکھنا پڑیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکہ کسی بھی صورت چین کے حملے کی صلاحیت کو سلب نہیں کرسکتا کیونکہ چینی آبدوزیں اپنے محفوظ پانیوں کے اندر رہتے ہوئے امریکہ میں کسی بھی ہدف کو نشانہ بنا سکتی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی