’حرام خور‘ سینما گھروں میں نمائش کیلئے پیش، نواز الدین صدیقی نے صرف ایک روپیہ معاوضہ لیا

’حرام خور‘ سینما گھروں میں نمائش کیلئے پیش، نواز الدین صدیقی نے صرف ایک ...
’حرام خور‘ سینما گھروں میں نمائش کیلئے پیش، نواز الدین صدیقی نے صرف ایک روپیہ معاوضہ لیا

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بالی ووڈ کے بہترین اداکار نواز الدین صدیقی جو کردار میں مکمل طور پر ڈھل جانے میں اپنا ثانی نہیں رکھتے نے اپنی آج ریلیز ہونے والی فلم ” حرام خور“ کیلئے صرف ایک روپیہ معاوضہ وصول کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق فلم حرام خور جمعہ کے روز ریلیز کردی گئی ہے جس میں نواز الدین صدیقی اور شویتا تریپاٹھی مرکزی کردار میں نظر آرہے ہیں۔ یہ فلم ایک سکول ٹیچر اور چودہ سالہ طالبہ کے عشق کے گرد گھومتی ہے ۔

75 سالہ شخص کی موت کے بعد جنازے کی تیاری ، اچانک تابوت کے ہلنے کی آواز آنے لگی ، کھول کر دیکھا تو ایسا منظر کہ خاندان والوں کے منہ کھلے کے کھلے رہ گئے

فلم پروڈیوسر گنیت مونگا کا کہنا ہے کہ فلم کا بجٹ بہت ہی تھوڑا تھا لیکن اس کا سکرپٹ بہت ہی جاندار ہے جس کے باعث اکثر فنکاروں نے اپنے روایتی معاوضے سے بہت کم معاوضہ لیا اور بہت سے اداکاروں نے فلم میں کام کرنے کا ایک روپیہ بھی وصول نہیں کیا۔

وہ ایک قسم کی فحش فلمیں جنہیں انٹرنیٹ پر ڈھونڈنے والے افراد کی تعداد میں پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران کئی گنا اضافہ ہو گیا کیونکہ۔۔۔

انہوں نے بتایا کہ نواز الدین صدیقی کو فلم کا سکرپٹ بے حد پسند آیا تھا لیکن وہ ایک فلم کا معاوضہ 6 سے 8 کروڑ روپے وصول کرتے ہیں تاہم انہوں نے فلم کے بجٹ کو مدنظر رکھتے ہوئے صرف ایک روپیہ بطور ٹوکن معاوضہ لیا۔

واضح رہے کہ فلم حرام خور 2015 میں صرف 16 روز میں فلمائی گئی تھی تاہم قانونی وجوہات کی بنا پر اسے 13 جنوری 2017 کو ریلیز کیا گیا ہے۔ اس فلم کو سینما گھروں میں نمائش کیلئے پیش کرنے سے پہلے 15 ویں نیو یارک انڈین فلم فیسٹیول میں تمائش کیلئے پیش کیا گیا تھا جس کے بعد نواز الدین صدیقی کو بہترین اداکار کے ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔

مزید : تفریح