نومنتخب وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو 2013 کے انتخابات میں صرف 544 ووٹ لیکر رکن اسمبلی منتخب ہوئے

نومنتخب وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو 2013 کے انتخابات میں صرف 544 ووٹ ...
نومنتخب وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو 2013 کے انتخابات میں صرف 544 ووٹ لیکر رکن اسمبلی منتخب ہوئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)بلوچستان کے نومنتخب وزیراعلیٰ عبدالقدوس بزنجو 2013 کے عام انتخابات میں صرف 544 ووٹ لے کر رکن اسمبلی منتخب ہوئے جبکہ ان کے مدمقابل نیشنل پارٹی کے میر ہدایت اللہ کو صرف95 ووٹ ملے تھے، اس علاقے میں رجسٹر ووٹوں کی کل تعداد 57 ہزار 666 ہے لیکن مسلح تنظیموں کی دھمکیوں کے باعث آواران میں صرف 672 کاسٹ ہوئے تھے۔

عبدالقدوس بزنجو یکم جنوی 1974 کو بلوچستان کے ضلع آواران کے گاﺅں شنڈی جھو میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے پہلی بار 2002ءمیں مشرف دور میں صوبائی حلقے پی بی 41 سے کامیابی حاصل کی۔ 2013ءکے عام انتخابات میں عبدالقدوس بزنجو نے مسلم لیگ (ق) کے ٹکٹ پر انتخاب لڑا اور پاکستان کی انتخابی تاریخ میں سب سے کم یعنی 544 ووٹ لے کر صوبائی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے۔ اس حلقے میں ڈالے گئے ووٹوں کا تناسب ایک اعشاریہ ایک 8 فی صد رہا۔ عبدالقدوس بزنجو 2013 سے 2015 تک صوبائی اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر رہے جو بعد میں مستعفی ہو گئے۔

نومنتخب وزیراعلیٰ عبدالقدوس بزنجو کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ وہ غالباً پاکستان کی تاریخ میں سب سے کم ووٹ لیکر منتخب ہونے والے رکن اسمبلی ہیں ۔

مزید : قومی /علاقائی /بلوچستان /کوئٹہ