چینی موبائل کمپنی ویوو نے ایپل اور سام سنگ کو بھی پیچھے چھوڑدیا، ایک ایسا فیچر موبائل میں دیدیا جو صارفین کی اشد ضرورت تھی

چینی موبائل کمپنی ویوو نے ایپل اور سام سنگ کو بھی پیچھے چھوڑدیا، ایک ایسا ...

لاس ویگاس(ویب ڈیسک) چینی کمپنی ویوو نے فنگر پرنٹ سکینر کے معاملے میں ایپل اور سام سنگ کوبھی پیچھے چھوڑ دیا۔لاس ویگاس میں جاری کنزیومر الیکٹرونکس شو کے دوران ویوو نے ایساسمارٹ فون پیش کیا، جس میں فنگرپرنٹ سنسر ڈیوائس کی فرنٹ اسکرین کے اندر دیا گیا ۔اس وقت دیگر کمپنیاں سمارٹ فون کے ڈسپلے کو بیزل لیس کرنے میں مصروف ہیں جس کی وجہ سے فرنٹ پر فنگرپرنٹ سنسر کی جگہ ختم ہوگئی ہے اوروہ فون کے پیچھے منتقل کرنا پڑا یا ختم کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کمپنی کی جانب سے سکرین کے اندر فنگرپرنٹ سنسر کو شامل کرنے پر کافی عرصے سے کام جاری تھا اور اب اس میں کامیابی مل گئی ۔اس کمپنی نے گزشتہ سال اس ٹیکنالوجی کا پروٹوٹائپ فون میں تجربہ بھی کیا تھا اور اس وقت کوالکوم کی مدد سے الٹراسونک سنسر کو استعمال کیا تھامگر اب اس ٹیکنالوجی کو مزید بہتر کرتے ہوئے آپٹیکل بیس فنگر پرنٹ سنسر کو تیار کیا گیا ہے اور اب سکرین کے ایک خاص حصے میں انگلی رکھنے پر ایل ای ڈی پینل اسے جگمگا دیتا ہے اور فون ان لاک کیا جاسکتا ہے اور اچھی بات یہ ہے کہ یہ فون بیزل لیس ہے اور کمپنی اسے رواں سال کسی وقت فروخت کے لیے پیش کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

دوسری طرف ایپل کے آئی فون ایکس (10) میں اس ٹیکنالوجی کو متعارف کرائے جانے کی توقع تھی تاہم ایسا نہیں ہوسکا جبکہ سام سنگ کو گلیکسی ایس ایٹ اور نوٹ ایٹ میں میں ایسا کرنے میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ ایس نائن میں ممکنہ طور پر یہ موجود نہیں ہوگی۔ویوو کے مطابق اس میں فنگرپرنٹ کو رجسٹر کرنے کا عمل دیگر فون کے فنگرپرنٹ سنسر جیسا ہی ہے، بس اب اپنی انگلی کو ڈسپلے کے نچلے حصے میں ایک آئیکون پر رکھیں اور اس وقت تک دبا کر رکھیں جب تک سکینگ کا عمل مکمل نہ ہوجائے۔

مزید : بزنس /سائنس اور ٹیکنالوجی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...