پشاور، رمضافات میں گیس پریشرکم ، ایل پی جی ، لکڑی کے استعمال میں اضافہ

پشاور، رمضافات میں گیس پریشرکم ، ایل پی جی ، لکڑی کے استعمال میں اضافہ

پشاور(سٹی رپورٹر)شہر و مضافات میں سوئی گیس پریشر کی کمی اور غیر اعلانیہ گیس لوڈشیڈنگ کے باعث ایل پی جی اور لکڑی کے استعمال میں کافی اضافہ دیکھنے کو ملا ہے جبکہ مانگ میں اضافے کو دیکھتے ہی دکانداروں نے ایل پی جی اور لکری کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ہے شہریوں نے بتایا کہ وہ گیس نہ ہونے کے باعث ایل پی جی اور لکڑی استعمال کرنے پر مجبور ہیں جبکہ دکانداروں نے ایل پی جی اور لکڑی کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ہے جس کلے باعث انہیں شدید مشکلا ت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے انہوں نے ذمہ داران سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مہنگے داموں ایل پی جی فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف کلاروائی کرے

پشاور(سٹی رپورٹر) شہر و مضافات میں سوئی گیس پریشر کی کمی، کمپریسر مافیا کی موجیں ، بااثر افراد نے گھروں، پلازوں ، کارروباری مراکز میں کمپریسر سے زندگی پرسکون بنا لی ، جبکہ عام آدمی کے چولہے ایک وقت کی روٹی پکانے سے بھی محروم، تفصیلات کیمطابق جہاں پر بجلی ،پٹرولیم سمیت دیگر بحرانوں نے عوام کو اپنے چنگل میں بری طرح جکڑ رکھا ہے وہاں پر رہی سہی کسر شہر سمیت ملحقہ آبادیوں میں محکمہ سوئی گیس کی مبینہ ملی بھگت سے تقریبا ہر گلی محلے میں بااثر افراد نے مبینہ طور پر سوئی گیس کے پریشر کو پورا کرنے کے لئے گھروں، پلازوں ، کارروباری مراکز میں کمپریسر اور چائنہ گیس باکس وغیرہ لگا کر پوری کر دی ہے جبکہ عام شہری کے گھروں میں 24 گھنٹے کے دوران ایک وقت کی روٹی پکانے کیلئے بھی چولہوں میں گیس کی منہ دکھائی تک نصیب نہیں ہو رہی سرعام گھروں میں کمپریسر استعمال کر نے والوں سے کوئی پوچھنے والا نہیں اور محکمہ سوئی گیس کے حکام بھی صورتحال کا نوٹس لینے کی بجائے صرف خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں ،شہریوں حسن رضا، نویدالحسن، محمد انیس ، محمد رئیس، محمد افضال ، محمد شہزاد انورو دیگر نے بتایا کہ سوئی گیس کا عملہ مبینہ طور پر چمک اور سفارشی بنیادوں پر کمپریسر مافیا کے ساتھ ملا ہوا ہے ، عوامی سماجی ، رفاعی ، فلاحی حلقوں سمیت شہریوں نے وفاقی وزیر پٹرولیم سمیت ، سوئی نادرن گیس پائپ لائن کے ارباب اختیار سے صورتحال کا نوٹس لیکر کمپریسر مافیا کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر