مردان ،سینکڑوں مزارعین کا بچوں سمیت بیدخلی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

مردان ،سینکڑوں مزارعین کا بچوں سمیت بیدخلی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

مردان (بیورورپورٹ) شاملات خٹکو کلے ،الوقاسمی اور تازہ گرام چیل کھنڈاؤ کے سینکڑوں مزارعین نے بچوں کے ہمراہ زمینوں سے زبردستی بے دخلی کے خلاف پریس کلب کے سامنے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیامظاہرین نے پولیس اور سول انتظامیہ کے خلاف شدید نعرہ بازی کرتے ہوئے انصاف کی فراہمی اور بے دخلی روکنے کا مطالبہ کیا مزدور کسان پارٹی کے مرکزی نائب صدر وارث خان ،الو کے رہائشی ممتازخان اور تازہ گرام چیل کھنڈاؤ کے سابق ناظم نواب رحمان نے علاقے کے سینکڑوں افراد اور بچوں کے ہمراہ پرہجوم پریس کانفرنس کے بعد مظاہرہ کیا جنہوں نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جن پر مطالبات کے حق میں نعرے درج تھے ان متاثرین کاکہناتھاکہ علاقے کے بااثر افراد نے ان کے باپ دادکے اراضیات پر زبردستی قبضہ کے لئے جعلی انتقالات کئے ہیں اور سول انتظامیہ سے مل کر ہم پر زمین تنگ کردی ہے انہوں نے کہاکہ پولیس نے بھی جانبداری کی ہے وارث خان نے کہاکہ شاملات خٹکو کلے موضع میاں عیسٰی میں 714کنال میں 63کنال مالکان کی اراضی ہے لیکن جعلی انتقالات کرکے 30خاندانوں کا زندگی حرام کردیاہے سابق ناظم نواب رحمان اور رحمانی سید نے بتایاکہ علاقہ تازہ گرام چھیل کھنڈاؤ میں ہم قیام پاکستان سے قبل آباد ہیں ہمارے خلاف 129کنال بے دخلی کا وارنٹ جاری کیاہے جو سراسر ظلم وذیادتی ہے الو قاسمی کے رہائشی ممتازخان ولد غفورخان نے بتایاکہ ان کی 14کنال اراضی ہے لیکن مخالف فریق امان اللہ وغیر ہ نے ہمارے چار جریب گنے کا فصل کاٹ کر قبضے کی کوشش کی انہوں نے کہاکہ بے شک وہ تقسیم کا دعویٰ کریں تو ہم تسلیم کریں گے ۔ ان متاثرین نے مطالبہ کیا کہ ان زمینوں کی بے دخلیوں کے حوالے سے دوبارہ انکوائری کرکے ہمارے ساتھ انصاف کیاجائے بصورت دیگر علاقے میں بڑے پیمانے پر خونریزی کا خطرہ پیداہوگیاہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر