’’دیوار خستگی ہوں مجھے ہاتھ مت لگا‘‘ حکومتی مدت کے حوالے سے جاوید ہاشمی کا شاعری میں جواب

’’دیوار خستگی ہوں مجھے ہاتھ مت لگا‘‘ حکومتی مدت کے حوالے سے جاوید ہاشمی کا ...

ملتان(سٹی رپورٹر)حکومت کی مدت کے حوالے سے سوال کے جواب میں مخدوم جاوید ہاشمی نے برجستہ شعر کہاجس پر خوب واہ واہ ہوئی ، ایک سوال کے جواب میں جاوید ہاشمی نے یہ شعر پڑھا کہ دیوار خستگی ہوں مجھے ہاتھ مت لگا ‘میں گرپڑوں گا دیکھ مجھے آسرا نہ دے۔ اور کہاکہ حکومت نے ایسے وعدے کئے تھے کہ جیسے انکی حکومت ملک میں دودھ ، شہد کی نہریں جاری اور صنعتی انقلاب آجائے گا ، معاشی ٹیم ملک میں انقلاب برپاکردے گی مگر اب جس بھی ڈبے کو کھولتے ہیں وہاں سے نجومی کا کبوتر نکلتاہے ۔اور ہمار امیڈیا مظبوط ہے جو بہت جلد حکومت کو پٹڑی پر لانے کے لئے اپنا موثر کردارادا کرے گا۔

جواب

مزید : کراچی صفحہ اول