حکمرا ن پارٹیاں اللہ اور عوام کو نہیں پنڈی کو طاقت کا سر چشمہ سمجھتی ہیں: سراج الحق

حکمرا ن پارٹیاں اللہ اور عوام کو نہیں پنڈی کو طاقت کا سر چشمہ سمجھتی ہیں: سراج ...

  



لاہور(این این آئی)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ وزیر اعظم چاہے نہ چاہے اسلا م آباد سے روزانہ این آر او جاری ہورہے ہیں،حکمران پارٹیاں اللہ اور عوام کو نہیں پنڈی کو طاقت کا سرچشمہ سمجھتی ہیں، سابقہ و موجودہ حکمران پارٹیوں نے ثابت کردیا ہے کہ وہ ایک ہی در کی فقیر ہیں، ان کے ظاہر ی اختلافات عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کیلئے ہیں، موجودہ حکومت کی یہی پالیسیاں رہیں تو کل کو بھارتی آرمی چیف مظفر آباد کی بجائے اسلام آباد پر قبضہ کی دھمکی بھی دے سکتاہے،وزیراعظم کا قبر میں سکون کا بیان واعظ نہیں اپنی بے بسی کا اظہار ہے، وزیراعظم قوم کو مایوس کر رہے ہیں اور کہنا چاہتے ہیں کہ ہمارے ہوتے ہوئے کسی سکون اور آرام کی امید نہ رکھنا، ملک پر اصل حکومت نیپرا، اوگرا او رپیمرا کی ہے، آنے والا وقت اسٹیٹس کو اور استحصالی نظام کی محافظ پارٹیوں کی شکست اور خوشحال اسلامی پاکستان کے لیے جدوجہد کرنے والوں کی فتح کا ہے، نوجوان ملک میں شاندار اسلامی انقلاب کا ہراول دستہ بنیں گے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں لوئر دیر اور کوئٹہ کے جے آئی یوتھ کے ذمہ داران کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔  سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ وزیراعظم کا یہ بیان کہ پاکستان میں جیتے جی کسی کو سکون نہیں ملے گا اور اگر کوئی سکون اور آرام  چاہتاہے تو اسے مر جاناچاہیے، انتہائی مایوسی کا اظہار ہے لگتاہے وزیراعظم نے ہاتھ کھڑے کر دیے ہیں کہ وہ عوام کے امن و سکون کے لیے کچھ نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہاکہ اللہ کا نظام امن و سکون، خوشحالی اور ترقی کاضامن ہے۔ حکومت آئی ایم ایف اور استعماری قوتوں کی غلامی چھوڑ دے اور قرآن و سنت کے مطابق ملک کا نظام چلائے تو پاکستان امن و سکون اور خوشحالی کا گہوارہ بن سکتاہے لیکن حکمران اس غلامی سے نکلنے کو تیار نہیں۔ قرضوں کے نشہ میں مبتلا حکمرانوں کو اس کے بغیر نیند نہیں آتی۔ سابقہ حکومتوں نے ملک کو 31 ہزار ارب کا مقروض کیا تھا اور موجودہ حکمرانوں نے صرف پندرہ ماہ میں اسے 42 ہزار ارب تک پہنچادیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ بلوچستان اور جنوبی پنجاب سمیت ہر جگہ مسائل ہی مسائل ہیں۔ سندھ میں 70 سال سے اقتدار پر مسلط پارٹی ان مسائل کو حل نہیں کر سکی۔

سراج الحق 

مزید : صفحہ آخر


loading...