ایرانی میزائل حملے کے مناظر، شدت کو الفاظ میں بیان کرنا مشکل ہے: امریکی فوجی 

ایرانی میزائل حملے کے مناظر، شدت کو الفاظ میں بیان کرنا مشکل ہے: امریکی فوجی 

  



واشنگٹن،بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی)  امریکی فوجی اڈے عین الاسد میں موجود فوجی نے ایرانی میزائل حملے کو انتہائی خوفناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایرانی حملے کے مناظر کو الفاظ میں بیان کرنا مشکل ہے۔تفصیلات کے مطابق معروف امریکی نشریاتی ادارے نے دعوی کیا ہے کہ عراق میں واقع امریکا کے سب سے بڑے عین الاسد فوجی اڈے پر ایران کے داغے گئے میزائلوں سے کم از کم بھی 10 مقامات مکمل طور تباہ ہوئے ہیں جبکہ ایک امریکی فوجی نے ایرانی حملے کو انتہائی خوفناک بتایا ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ عراق میں امریکا کی جانب سے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کی کارروائی کے بعد ایران کی جانب سے کی جانے والی جوابی کارروائی میں عین الاسد فوجی اڈے کو نشانہ بنایا تھا۔ امریکی ٹی وی کی رپورٹ میں دعوی کیا گیا کہ فوجی اڈے پر تباہ کاری کے مناظر کچھ اور ہی کہانی بتا رہے ہیں اور اڈے پر تباہی کے مناظر سے غیر معمولی صورتحال کا اشارہ ملتا ہے۔ ایرانی حملے میں امریکی فوجیوں کے رہائشی کوارٹرز بھی تباہ ہوچکے ہیں تاہم ایڈوانس وارننگ سسٹم کے باعث جانی نقصان نہیں ہوا۔ متاثرہ فوجی اڈے تک رسائی پانے والی صحافی نے کہا کہ فوجیوں نے انہیں بتایا ہے کہ حملے سے کئی گھنٹے قبل جان گئے تھے کہ کچھ نہ کچھ ہونے جا رہا ہے اس لیے احتیاطی تدابیراختیار کی گئی تھیں جبکہ کچھ فوجی بنکرز میں موجود تھے، زیادہ تر چیک پوسٹوں پر تعینات تھے۔ ایک امریکی فوجی نے بتایا کہ رات ایک بج کر 34 منٹ پر ایرانی میزائل حملے شروع ہوئے، حملے کا منظر بیان کرنا مشکل ہے کیونکہ یہ ایک انتہائی خوفناک حملہ تھا تاہم احتیاطی تدابیر اور محفوظ مقامات پر منتقلی سے کافی جان بچ گئی۔ایک امریکی ٹی وی نے بھی دعویٰ کیا ہے کہ عراق میں امریکا کے عین الاسد فوجی اڈے پر ایرانی حملے میں غیرمعمولی نقصان ہوا۔ارپورٹ کے مطابق فوجی اڈے پر تباہ کاری کے مناظر کچھ اور ہی کہانی بتا رہے ہیں، تباہی کے مناظر سے غیر معمولی صورتحال کا اشارہ ملتا ہے۔امریکی ٹی وی کی رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ایرانی حملے میں امریکی فوجیوں کے رہائشی کوارٹرز بھی تباہ ہو چکے ہیں تاہم ایڈوانس وارننگ سسٹم کے باعث جانی نقصان نہیں ہوا۔فوجی اڈے تک رسائی پانے والی صحافی نے کہا کہ فوجیوں نے انہیں بتایا ہے کہ حملے سے کئی گھنٹے قبل جان گئے تھے کہ کچھ نہ کچھ ہونے جا رہا ہے اس لیے احتیاطی تدابیر اختیار کی گئی تھیں۔امریکی فوجی نے صحافی کو یہ بھی بتایا کہ رات ایک بج کر 34 منٹ پر میزائل حملے شروع ہوئے تو کچھ فوجی بنکرز میں موجود تھے جب کہ زیادہ تر چیک پوسٹوں پر تعنیات تھے۔

ایرانی حملہ

مزید : صفحہ اول