نواز شریف اداروں کی خودمختاری  پر یقین رکھتے ہیں، جاوید لطیف

نواز شریف اداروں کی خودمختاری  پر یقین رکھتے ہیں، جاوید لطیف

  



    اسلام آباد (آئی این پی)  مسلم لیگ (ن) کے رہنماء  جاوید لطیف نے کہا ہے کہ آرمی ایکٹ پر فیصلہ پہلے سے طے شدہ نہیں تھا،قانون میں ابہام تھا اس کو درست کرنے کا  فیصلہ کیاگیا،،توسیع پر ہمارا اختلاف نہیں تھا، توسیع پہلے بھی وزیراعظم کی صوابدیدتھی،نواز شریف اداروں کی خودمختاری پر یقین رکھتے ہیں،     چودھری نثار کی باقیات  ابھی بھی مسلم لیگ (ن)  میں موجود ہیں،  نواز شریف کی غیر موجودگی میں کارکنان مریم نواز کی قیادت میں باہر نکلے،مریم نواز پارٹی کی اہم اور متحرک رہنما ء ہیں،  وہ (والد) کی صحت کی وجہ سے خاموش ہیں،شہباز شریف تصور ہی نہیں کرسکتے کہ وہ نواز شریف سے الگ ہوں، پارٹی میں بیانیہ نواز شریف کا ہی ہے۔اتوار کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے  مسلم لیگ (ن) کے رہنماء  جاوید لطیف نے کہا ہے کہ آرمی ایکٹ پر فیصلہ پہلے سے طے شدہ نہیں تھا،قانون میں ابہام تھا اس کو درست کرنے کا  فیصلہ کیاگیا۔ انہوں نے کہا کہ لندن میں وفد نے نواز شریف کے ساتھ مشاورت کی   تھی،  نواز شریف  نے  ہدایت  دی پارلیمانی طریقہ کار کو اپنایا جائے،توسیع پر ہمارا اختلاف نہیں تھا، توسیع پہلے بھی وزیراعظم کی صوابدیدتھی۔(ن) لیگی رہنماء جاوید لطیف نے کہا کہ نواز شریف اداروں کی خودمختاری پر یقین رکھتے ہیں، پرویز مشرف کی سزا پر ہارجیت کا تصور معنی نہیں رکھتا۔ انہوں نے کہا کہ    نواز شریف کی غیر موجودگی میں کارکنان مریم نواز کی قیادت میں باہر نکلے،مریم نواز پارٹی کی اہم اور متحرک رہنماء  ہیں، مریم نواز (والد)نواز شریف کی صحت کی وجہ سے خاموش ہیں،شہباز شریف تصور ہی نہیں کرسکتے کہ وہ نواز شریف سے الگ ہوں، پارٹی میں بیانیہ نواز شریف کا ہی ہے،پارٹی کے  سینئررہنما اپنی سمجھ کے مطابق پارٹی فیصلے کررہے ہیں لیکن      چودھری نثار کی باقیات  ابھی بھی مسلم لیگ (ن)  میں موجود ہیں۔

جاوید لطیف

مزید : صفحہ آخر


loading...