بہتر انتظامی امور، اصلاحات اور ریفارمز میں آزاد کشمیر بازی لے گیا: پاکستان بیورو شماریات

        بہتر انتظامی امور، اصلاحات اور ریفارمز میں آزاد کشمیر بازی لے گیا: ...

  



اسلام آباد(آن لائن)پاکستان میں انتظامی امور میں اصلاحات اور بہترین سروس ڈیلیوری کے حوالے سے سال2019 ء کے اختتام پر جاری رپورٹ میں بہترین انتظامی امور، اصلاحات اور ریفارمز میں آزاد ریاست جموں وکشمیر بازی لے گیا۔ پاکستان بیورو شماریات کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے چاروں صوبوں، گلگت بلتستان سمیت انتظامی امور میں اصلاحات پر آزاد کشمیر کا پہلا نمبر، صوبہ بلوچستان دوسرے، گلگت بلتستان تیسرے، خیبر پختونخوا چوتھے، سندھ پانچویں نمبر پر جبکہ صوبہ پنجاب انتظامی اصلاحات اور امور میں بہتری  کے حوالے سے سب سے پیچھے چھٹے نمبر پر رہا جہاں سب سے زیاد بدانتظامی دیکھنے میں آئی۔ آزاد کشمیر کے انتظامی امور میں بہتری اور محکمہ جات کی اصلاحات میں آزاد ریاست جموں و کشمیر کے چیف سیکرٹری مطہر نیاز رانا نے کلیدی کردار ادا کیا جنہوں نے ریاست کے روایتی انتظامی ڈھانچے کونہ صرف تبدیل کیا بلکہ آزاد کشمیر کی تاریخ میں پہلی بار چیف سیکرٹری کے اعلی عہدے پر فائز کسی بھی شخصیت نے عوام کیلئے کھلی کچہریوں کے انعقاد کی بنیاد ڈالی۔ یکم جنوری2019ء کو تعینات ہونے والے چیف سیکرٹری آزاد کشمیر خواجہ داؤد احمد کو قلیل عرصہ ایک ماہ  بعد  12 فروری 2019 ء کو تبدیل کرکے مطہر نیاز رانا کوچیف سیکرٹری آزاد کشمیر تعینات کیا گیا جو تاحال اپنی ذمہ داریاں سرانجام دے رہے ہیں، چیف سیکرٹری مطہر نیاز رانا نے رواں سال میں آزاد کشمیر کی تاریخ میں روایت سے ہٹ کر ایسے اقدامات کیے جس سے پاکستان بھر میں آزاد کشمیر کو بہترین انتظامی امور میں نمایاں مقام حاصل ہوا۔رپورٹ کے مطابق رواں ایک سال میں گزشتہ 48 چیف سیکرٹریز کی نسبت موجودہ چیف سیکرٹری نے ایک برس میں تمام محکموں کے حوالے سے عملی اقدامات کرتے ہوئے ریاست کے انتظامی ڈھانچے میں عملاً اصلاحات سے آزاد ریاست جموں وکشمیر میں بہترین انتظامی امور کی مثال قائم کی۔جبکہ پاکستان کے چاروں صوبوں اور گلگت بلتستان کا ذکرکیا جائے تو رواں سال کے دوران سول سروس کی ڈیلیوری،انتظامی امور اور اصلاحاتی نظام میں بے شمار خامیاں نظر آئیں پاکستان کے آباد ی کے لحاظ سے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں اکتوبر 2018 ء میں یوسف نسیم کھوکھر کو چیف سیکرٹری کا چارج دیا گیا جن کو نومبر 2019 ء کو تبدیل کرکے میجر (ر) اعظم سلمان خان کو پنجاب کے چیف سیکرٹری تعینات کیا گیا اس کے باوجود پنجاب میں رواں سال سب سے زیادہ بد انتظامی دیکھنے  میں آئی۔اسی طرح رقبے کے لحاظ کے سب سے بڑے صوبہ بلوچستان میں جون 2018 ء  میں تعینات ہونے والے چیف سیکرٹری اختر نیازکو اگست 2019 ء کو تبدیل کرکے فضل اصغر کوچیف سیکرٹری بلوچستان لگا دیا گیا۔ جبکہ صوبہ سندھ میں ستمبر 2018 ء سے تاحال سید ممتاز علی شاہ چیف سیکرٹری تعینات ہونے کے باوجود صوبہ میں انتظامی بدحالی کے باعث حکومت سندھ کو شدید تنقید کاسامنا ہے۔صوبہ خیبر پختونخوا میں جون 2018 ء کو محمد اعظم خان کوچیف سیکرٹری تعینات کیا گیا اور 25 اکتوبر 2019 ء میں محمد اعظم خان کو تبدیل کرکے ڈاکٹر کاظم نیاز کوچیف سیکرٹری خیبرپختونخواکا چارج دیا گیا اسی طرح گلگت بلتستان میں محمد خرم آغا نومبر 2018  تاحال چیف سیکرٹری کے عہدے پر ذمہ داریاں انجام دے رہے ہیں۔وفاقی حکومت کی جانب سے چیف سیکرٹریوں کی تقرریوں اور تبادلوں کے باوجود چاروں صوبوں میں سول سروس کی بہتری ممکن نہ ہوسکی اس طرح مطہر نیاز رانا کی بہترین انتظامی صلاحیتوں کی بدولت آزاد کشمیر انتظامی امور میں سب سے آگے رہا۔

رپورٹ

مزید : صفحہ آخر


loading...