خالد مقبول صدیقی کا وزارت سے استعفیٰ خوش آئند ہے، سعید غنی

خالد مقبول صدیقی کا وزارت سے استعفیٰ خوش آئند ہے، سعید غنی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر اطلاعات و محنت سندھ سعید غنی نے اتوار کے روز متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما خالد مقبول صدیقی کے وفاقی کابینہ سے استعفیٰ دینے کے فیصلے کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں یہ فیصلہ بہت پہلے کرلینا چاہئے تھا۔ سعید غنی نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی حکومت نے نہ صرف عوام سے کئے گئے وعدوں کو پورا نہیں کیا بلکہ انہوں نے اپنے اتحادیوں سے کئے گئے وعدوں کو بھی بھلا دیا۔صوبائی وزیر اطلاعات نے واضح کیا کہ متحدہ قومی موومنٹ نے پاکستان پیپلز پارٹی کے کہنے پر وفاقی کابینہ کو نہیں چھوڑا بلکہ یہ ان کا اپنا فیصلہ تھا۔انہوں نے کہا یہ فیصلہ خود متحدہ قومی موومنٹ نے ہی کرنا ہے، کہ وہ سندھ حکومت کا حصہ بننا چاہتے ہیں کہ نہیں۔سعید غنی نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری یہ بات باربار کہتے رہے ہیں کہ وفاقی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے لوگ پریشان ہیں۔صوبائی وزیر اطلاعات سعید غنی نے کہا کہ وفاقی حکومت نے کراچی میں ترقیاتی کاموں کے حوالے سے کئے گئے اپنے وعدوں میں سے ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے لئے مختص کئے گئے 162 ارب روپے میں سے ایک روپیہ بھی نہیں دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے لوگوں کو مہنگائی اور بیروزگاری کے سواکچھ نہیں دیا۔ سعید غنی نے کہا کہ جب تک پاکستان تحریک انصاف کی حکومت قائم رہے گی، تب تک کسی اچھے کام یا خوشخبری کی امید رکھنا بے کار ہے۔ دریں اثناشہید ذوالفقار علی بھٹو کی 92 ویں سالگرہ کے حوالے سے منعقد ہونے والی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سندھ کے وزیر اطلاعات و محنت سعید غنی نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو ایک شخصیت کا نہیں بلکہ ایک تحریک اور نظریہ کا نام ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر