لوہے کے کارخانے میں دیکھیں مزدوروں کاکام کتنا مشکل ہے،کیا ہم ان مزدورں کی تنخواہیں بھی ٹریفک وارڈنز کے برابر کر دیں؟سپریم کورٹ نے پنجاب ٹریفک وارڈنزکواضافی الاوَنس دیئے جانےکافیصلہ کالعدم قراردیدیا

لوہے کے کارخانے میں دیکھیں مزدوروں کاکام کتنا مشکل ہے،کیا ہم ان مزدورں کی ...
لوہے کے کارخانے میں دیکھیں مزدوروں کاکام کتنا مشکل ہے،کیا ہم ان مزدورں کی تنخواہیں بھی ٹریفک وارڈنز کے برابر کر دیں؟سپریم کورٹ نے پنجاب ٹریفک وارڈنزکواضافی الاوَنس دیئے جانےکافیصلہ کالعدم قراردیدیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے پنجاب ٹریفک وارڈنزکواضافی الاوَنس دیئے جانےکافیصلہ کالعدم قراردیدیا،چیف جسٹس گلزاراحمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ لوہے کے کارخانے میں دیکھیں مزدوروں کاکام کتنا مشکل ہے،کیا ہم ان مزدورں کی تنخواہیں بھی ٹریفک وارڈنز کے برابر کر دیں؟یہ نہیں ہو سکتا کہ آپ نوٹی فکیشن کا ایک حصہ قبول کرلیں اور دوسرا نہ کریں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں سروس ٹربیونل کی جانب سے پنجاب ٹریفک وارڈنزکو اضافی الاﺅنس دیئے جانے کے معاملے پر سماعت کی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی،پنجاب حکومت کی جانب سے ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل عدالت میں پیش ہوئے۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ لوہے کے کارخانے میں دیکھیں مزدوروں کاکام کتنا مشکل ہے،کیا ہم ان مزدورں کی تنخواہیں بھی ٹریفک وارڈنز کے برابر کر دیں؟جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ ٹریفک وارڈنز کوپنجاب ہائی وے پیٹرولنگ پولیس سے زیادہ تنخواہ نہیں دی جاسکتی،چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہا کہ یہ نہیں ہو سکتا کہ آپ نوٹی فکیشن کا ایک حصہ قبول کرلیں اور دوسرا نہ کریں۔سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت کی درخواست منظور کرتے ہوئے پنجاب ٹریفک وارڈنزکواضافی الاوَنس دیئے جانےکافیصلہ کالعدم قراردیدیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد