ایران کی اکلوتی خاتون اولمپک میڈلسٹ ملک چھوڑ کر نیدرلینڈز منتقل، انتہائی حیران کن وجہ بھی سامنے آگئی

ایران کی اکلوتی خاتون اولمپک میڈلسٹ ملک چھوڑ کر نیدرلینڈز منتقل، انتہائی ...
ایران کی اکلوتی خاتون اولمپک میڈلسٹ ملک چھوڑ کر نیدرلینڈز منتقل، انتہائی حیران کن وجہ بھی سامنے آگئی

  



تہران (ویب ڈیسک) ایران کی اکلوتی خاتون اولمپک میڈلسٹ کیمیا علی زادہ نے اسلامی جمہوریہ کو خیرباد کہہ دیا ہے۔انھوں نے آن لائن ایک خط پوسٹ کیا ہے اور اس میں کہا ہے کہ وہ بھی ان لاکھوں ایرانی خواتین میں سے ایک ہیں، جنھیں ملک میں جبر واستبداد کا سامنا رہا ہے۔ایران کی نیم سرکاری خبررساں ایجنسی ایسنا کے مطابق تائیکوانڈو ایتھلیٹ علی زادہ نے انسٹاگرام پر ایک خط پوسٹ کیا ہے اور اس میں یہ اطلاع دی ہے کہ وہ ملک چھوڑ کر نیدرلینڈز چلی گئی ہیں۔انھوں نے لازمی سرپوش اوڑھنے کی پابندی کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور ایرانی حکام پر جنسی اخلاق باختگی اور ناروا رویہ اختیار کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔

انھوں نے ہفتے کے روز پوسٹ کیے گئے خط میں لکھا ہے:”انھوں (ایرانی حکام) نے جو بھی کہا، میں نے وہ (لباس) پہنا۔وہ جو جملہ حکم کرتے تھے، میں نے وہی دہرایا۔“انھوں نے ایران چھوڑنے کے فیصلہ کو مشکل قراردیا ہے لیکن کہا ہے کہ یہ ناگزیر تھا۔ایرانی حکام نے فوری طور پر علی زادہ کے عاید کردہ سنگین الزامات پر کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا ہے۔

ایسنا کی رپورٹ کے مطابق علی زادہ زخمی ہوگئی تھیں اور وہ اب فوری طور پر کسی مقابلے میں حصہ نہیں لے سکتی ہیں لیکن رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ وہ 2020ءمیں جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو میں منعقد ہونے والے اولمپک مقابلوں میں کسی اور ملک کی جانب سے حصہ لے سکتی ہیں۔21 سالہ علی زادہ نے 2016ءمیں ریو ڈی جنیرو میں منعقدہ اولمپکس میں تائیکوانڈو میں کانسی کا تمغا جیتا تھا۔انھوں نے ایسے وقت میں اپنے آبائی وطن کو خیرباد کہا ہے جب ایران اور امریکا کے درمیان القدس فورس کے کمانڈر میجر جنرل قاسم سلیمانی کی تین جنوری کو بغداد میں امریکی فوج کے ایک ڈرون حملے میں ہلاکت کے بعد سے سخت کشیدگی پائی جارہی ہے جبکہ ایران میں یوکرین کا مسافر طیارہ مارگرائے جانے پر احتجاجی مظاہرے بھی جاری ہیں۔

واضح رہے کہ حالیہ برسوں کے دوران میں متعدد ایرانی ایتھلیٹس حکومت کے جبرواستبداد کی تاب نہ لاکر ملک چھوڑ کر چلے گئے ہیں اور دوسرے ممالک میں مستقل طور پر جابسے ہیں۔ ستمبر2019ء  میں ایرانی جوڈوکا سعید مولائی نقلِ وطن کرکے جرمنی چلے گئے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ ایرانی حکام نے اسرائیلی جوڈوکا سے مقابلہ نہ کرنے کے لیے ان پر دبائو ڈالا تھا۔ایران کے فٹ بال کے ایک انٹرنیشنل ریفری علی رضا فاغانی گذشتہ سال ملک چھوڑ کر آسٹریلیا چلے گئے تھے۔

مزید : کھیل


loading...