پرویز مشرف کو سزا سنانے والی خصوصی عدالت کے قیام کو غیر آئینی قرار دئیے جانے پر فواد چوہدری بھی میدان میں آگئے

پرویز مشرف کو سزا سنانے والی خصوصی عدالت کے قیام کو غیر آئینی قرار دئیے جانے ...
پرویز مشرف کو سزا سنانے والی خصوصی عدالت کے قیام کو غیر آئینی قرار دئیے جانے پر فواد چوہدری بھی میدان میں آگئے

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے پرویز مشرف کو سزا سنانے والی خصوصی عدالت کے قیام کو غیر آئینی قرار دئیے جانے کو خوش آئند قرار دے دیا۔مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر انہوں نے کہا کہ یہ مقدمہ پہلے دن سے ہی متنازعہ تھا، جن چند ججوں نے نوکری سے نکالے جانے کو غداری قرار دیکر یہ کیس شروع کیا ان ججز نے صرف کچھ سال قبل نہ صرف مارشل لاکو جائز قرار دیا بلکہ آئین میں ترمیم کی اجازت بھی دی۔ لاہور ہائیکورٹ نے قانونی اور اخلاقی طور پر درست فیصلہ کیا ہے۔

 لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی نقوی کی سربراہی میں تین رکنی فل بینچ نے درخواست کی سماعت کی ، عدالت نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے کرمنل لاء سپیشل کورٹ ترمیمی ایکٹ 1976 کی دفعہ 4 کو کالعدم قرار دے دیا ہے ۔ہائیکورٹ کا فیصلے میں کہنا تھا کہآرٹیکل 6 کےتحت ترمیم کا اطلاق ماضی سے نہیں کیا جاسکتا، ملزم کی غیر موجودگی میں ٹرائل غیر قانونی ہے،خصوصی عدالت کی تشکیل کے وقت آئینی و قانونی تقاضے پورے نہیں کیے گئے۔

مزید : قومی