حکومت کوپتہ چل گیاہے کہ عام آدمی اور طاقتور آدمی کیلئے کیا قوانین ہیں؟ جاوید لطیف کا لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے پر ردعمل

حکومت کوپتہ چل گیاہے کہ عام آدمی اور طاقتور آدمی کیلئے کیا قوانین ہیں؟ جاوید ...
حکومت کوپتہ چل گیاہے کہ عام آدمی اور طاقتور آدمی کیلئے کیا قوانین ہیں؟ جاوید لطیف کا لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے پر ردعمل

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے رہنما جاویدلطیف نے کہاہے کہ خصوصی عدالت کا کیس کوئی عام یا نارمل کیس نہیں تھا لیکن حکومت وقت کو اب یہ پتہ چلاہے کہ اس فیصلے کے بعد عام آدمی کے لئے قانون کیا ہے اور طاقتور کے لئے قانون کیاہے؟

اے آروائی نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے جاوید لطیف نے کہا کہ خصوصی عدالت کا کیس کوئی عام یا نارمل کیس نہیں تھا لیکن حکومت وقت کو اب یہ پتہ چلاہے کہ اس فیصلے کے بعد عام آدمی کے لئے قانون کیا ہے اور طاقتور کے لئے قانون کیاہے ؟ انہوں نے کہا کہ عمران خان کے نزدیک طاقتور کاپیمانہ کوئی اور ہو تو کچھ کہا نہیں جاسکتا لیکن جو طاقتور ہیں نظر آرہے ہیں۔

جاوید لطیف کا کہنا تھا کہ یہ کوئی عام کیس نہیں تھا ،اس کیس میں آئین ٹوٹا تھا ۔انہوں نے کہا کہ اگرحکومت کو آج احساس ہواہے کہ حکومت میں آنے کے بعد حکومت کرنا کتنا مشکل ہوتاہے ؟ اگر خصوصی عدالت غیر آئینی تھی توچھ سال کیا ہوتا رہا ؟بنچ تبدیل ہوتے رے اور اب پتہ چلاہے ، اب طاقتورکا پتہ چل گیا ہے ۔

مزید : قومی