جام پور: بار الیکشن‘ حافظ ملازم کا شکست تسلیم کرنے سے انکار‘ حالات کشیدہ

 جام پور: بار الیکشن‘ حافظ ملازم کا شکست تسلیم کرنے سے انکار‘ حالات کشیدہ

  

  

جام پور (نامہ نگار) جام پور بار ایسویسی ایشن میں کامیاب ہو نے والے عہدیداران نے جشن منایا‘ ناکام ہو نے والے وکلاء نے نتائج کو ماننے سے صاف انکار کردیا‘ جلوس(بقیہ نمبر13صفحہ10پر)

 لے کرکے بار روم پہنچ گئے۔ دونوں کے درمیان دھکم پیل۔ شدید نعرہ بازی کی گئی‘ سنیئر وکلاء نے مداخلت کرکے معاملہ کو ٹھنڈا کردیا۔ تفصیل کے مطابق الیکشن میں ملک اعجاز احمد راں گروپ کے صدر مرزا خرم خان ایڈوکیٹ نے ایک ووٹ کی برتری حاصل کرکے کامیابی حاصل کی۔ تاہم ان کے مدمقابل وقاص گورچانی گروپ کے حافظ ملازم نے الیکشن کو دھاندلی قرار دیتے ہوئے شکست کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا۔ سوشل میڈیا پر ذہر اگلنے کے علاوہ جب بار میں کامیاب امیدواروں اعجاز احمد راں کے حامی نے جشن منا  نے کے لیے جلوس کے کرکے بار روم پہنچے تو پیچھے سے شکست کھانے والے حافظ ملازم بھی اپنے حامیوں کاقافلہ لے کرکے بار روم پہنچ گئے اسی دوران نعرہ بازی ہوئی اور ایک دوسرے کو دھکے تک نوبت جا پہنچی۔سابق صدر ملک گل شیر ڈھانڈلہ نے بورڈ کے ممبران پر جانبداری کا الزام لگایا اور الیکشن کو غیر منصفانہ قرار دیا۔ توں تکرا ر کے بعد سنیئر وکلاء نے مداخلت کرکے معاملہ کو ٹھنڈا کیا۔ تاہم بار روم میں کشیدگی کی صورت موجود ہے۔ جوکسی وقت بھی بڑے حادثہ کا پیش خیمہ ہو سکتی ہے۔ ذرائع کے مطابق شکست کھانے والے گروپ نے چھ ماہ کے لیے اقتدار میں شریک کرنے کا مطالبہ پیش کیا۔جوکہ اقتدار گروپ نے مسترد کر دیا ہے۔  دوسری طرف سنیئر وکلاء نے معاملہ کو خوش اسلوبی سے حل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ 

حالات کشیدہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -