صحت سہولیات کی دستیابی، پرائیویٹ سیکٹر کیلئے 40ارب روپے مختص: قرضوں کا دائرہ بڑھانے کا فیصلہ 

صحت سہولیات کی دستیابی، پرائیویٹ سیکٹر کیلئے 40ارب روپے مختص: قرضوں کا دائرہ ...

  

 ملتان (وقا ئع نگار) وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ طبی سہولیات کی سہل فراہمی کے لئے حکومت پنجاب تمام وسائل استعمال میں لا رہی ہے،2کروڑ22 لاکھ پنجاب کے رہائشیوں کواس سال کے اختتام پر صحت کارڈز دے رہے ہیں جبکہ صحت کے شعبے میں پرائیویٹ سیکٹر کو بھی قرضوں کی صورت میں مراعات دے رہے ہیں،پرائیویٹ سیکٹر میں صحت سہولیات کی دستیابی کے لئے40ارب روپے(بقیہ نمبر15صفحہ10پر)

 مختص کیے گئے ہیں۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز پنجاب ہیلتھ فاونڈیشن کے زیر اہتمام گورنمنٹ ایمرسن کالج ملتان میں روڈ شو کے انعقاد پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ روڈ شومیں ایڈیشنل چیف سیکرٹری ساتھ پنجاب زاہد اختر زمان، سیکرٹری ہیلتھ نبیل احمد اعوان، سیکرٹری ہیلتھ جنوبی پنجاب محمد اجمل بھٹی،اراکین صوبائی اسمبلی سلیم اختر لابر، قاسم لنگاہ،میاں عبداللہ طارق،واصف مظہر راں، چئیرمین پی ایچ اے اعجاز جنجوعہ، خالد جاوید وڑائچ، ایم ڈی پنجاب ہیلتھ فانڈیشن ڈاکٹر کرن خورشید و دیگر بھی شریک تھے۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ پرائیوٹ سیکڑ میں ہیلتھ پروفیشنلز کے لیے روزگار کا بندوبست ہماری ترجیح ہے، انہیں اسلامی اصولوں کے مطابق بلا سود قرضوں کی فراہمی کا کریڈٹ پنجاب حکومت کو جاتا ہے، ان کے لئے قرضوں کا دائرہ کار مزید بڑھائیں گے،انہوں نے کہا کہ پنجاب کے ہر شہری کو صحت کی سہولیات فراہم کرنا ہمارا نصب العین ہے، ہم وفاقی حکومت سے ملنے والے21 ارب روپے بھی صحت کے شعبے میں استعمال کریں گے۔وزیراعظم عمران خان اور وزیر اعلی عثمان بزدار کے ویژن کے مطابق نشتر ٹو،ڈی جی خان میں کارڈیالوجی کے علاوہ 3 مزید ہسپتال بنا رہے ہیں۔راجن پور،لیہ اور بہاول نگر میں ہسپتالوں پر 30ارب روپے کی لاگت پرآئے گی۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کا اثاثہ اس کے لوگ ہوتے ہیں ہم ان پر براہ راست انوسٹمنٹ کر رہے ہیں،صحت بڑی نعمت ہے،اس کے بغیر کوئی چیز اچھی نہیں لگتی،صحت کی سہولیات پر کوئی کمپرومائز نہیں کریں گے،صحت اور تعلیم پر خصوصی توجہ مرکوز ہے،ہر ایک کو طبی سہولیات فراہم کر رہے ہیں،ساہیوال،ڈی جی خان میں 42 فیصد صحت کارڈز لوگوں میں تقسیم کر چکے ہیں،سابق حکمرانوں نے ساوتھ پنجاب کے فنڈز دیگر منصوبوں پر لگائے اب یہاں کی ترقی کے لیے ترقیاتی کام روز و شور سے جاری ہیں،پنجاب میں کورونا کے دوران ہیلتھ پروفیشنلز نے بے پناہ محنت کی،دنیا کے بڑے ممالک بھی کوویڈ کو اسطرح قابو نہیں کرسکے جیسے ہم نے کیا۔ پریس کانفرنس کے دوران ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ تین مرتبہ وزیر اعظم رہنے والے نواز شریف کو کمٹمنٹ کی لاج رکھنا چاہیے،نواز شریف کی کوئی نئی رپورٹس نہیں آئیں،ہم نے نہیں عدالت نے انہیں مفرور قرار دیا ہے اور انہیں اب واپس آنا چاہیے۔ آ پ تسلی ر کھیں نواز شریف کو بیرون ملک بھیجنے وا لا گا رنٹر ہما رے پاس ہے۔وزیر صحت نے کہا کہ ملتان کارڈیالوجی ہسپتال کے توسیعی منصوبہ کے لیے جلد فنڈز فراہم کر رہے ہیں،پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے ریکارڈ بھرتیاں کیں اور پنجاب پبلک سروس کمیشن کے ذریعے32 ہزار ڈا کڑو ں،میل نر سز اور فا رما سسٹس کو مستقل ملازمتیں فراہم کیں ہیں، پنجاب ہیلتھ فاونڈیشن نے ریکارڈ 900لون دئیے ہیں جبکہ قرضے لینے والے پروفیشنلز نے97 فیصد ریکوری دی ہے،جو کہ حوصلہ افزاہے۔ اس موقع پر وزیر صحت پنجاب نے کہا کہ پنجاب ہیلتھ فاونڈیشن کا دفتر جلد ملتان میں بھی قائم کریں گے۔سیکرٹری صحت پنجاب بیرسٹر نبیل احمد اعوان نے کہا کہ محکمہ صحت پنجاب کیلئے آئندہ ایک سال انتہائی اہمیت کا حامل ہے،دسمبر 2021 تک یونیورسل ہیلتھ کوریج کے ذریعے پنجاب کے تمام خاندانوں کو صحت سہولت کارڈ کی فراہمی کو یقینی بنائیں گے۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنوبی پنجاب زاہد اختر زمان نے کہا کہ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے پنجاب ہیلتھ فاونڈیشن کو دوبارہ زندہ کرکے اس میں جان ڈال دی ہے۔ جنوبی پنجاب میں پنجاب ہیلتھ فاونڈیشن کا روڈ شو اور مختلف سکیموں کا افتتاح تاریخی اہمیت کا حامل ہے۔ ایم ڈی پنجاب ہیلتھ فاونڈیشن ڈاکٹر کرن خورشید نے کہا کہ ہم وزیرصحت و دیگر انتظامیہ کو خوش آمدید کہتے ہیں اور وزیرصحت کا خصوصی شکریہ ادا کرتے ہیں کہ انہوں نے طب کے شعبہ سے تعلق رکھنے والے افراد کیلئے بے پناہ آسانیاں پیدا کی ہیں۔

روز شو

مزید :

ملتان صفحہ آخر -