یوٹیلیٹی سٹورز سے گھی،آئل   چینی غائب،قیمتوں میں خوفناک  اضافہ، شہری خوار ہوگئے

 یوٹیلیٹی سٹورز سے گھی،آئل   چینی غائب،قیمتوں میں خوفناک  اضافہ، شہری خوار ...

  

 لاہور (لیڈی رپورٹر) یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن اور یو ٹیلیٹی سٹورز کو گھی فراہم کر نے والی کمپنی کے مابین گھی کی قیمتوں کے تعین کا معا ملہ تا حا ل حل نہ ہو سکا جس کے با عث گزشتہ روز یوٹیلیٹی سٹورز پر بھی گھی اور خوردنی تیل کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کر دیا گیا۔ ذارئع کے مطا بق  یوٹیلیٹی سٹورز کو گھی فراہم کرنے والی کمپنی نے قیمت بڑھانے کا مطالبہ کیا ہے جس پر ڈیڈ لاک برقرار ہے کیونکہ یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن کے مطابق قیمت بڑھا دی تو ریلیف کا مقصد ہی ختم ہو جائے گا، اسی ڈیڈ لاک میں 7 دن گزر گئے ہیں اور سستے گھی کی فراہمی نہیں ہو سکی ہے جبکہ درجہ اول گھی 21 روپے مہنگا، خوردنی آئل 19 روپے اضافے کیساتھ 262 کا ہو گیا، 170 روپے کلو والا سستا گھی غائب، یوٹیلیٹی سٹورز پر سستے گھی اور کوکنگ آئل کی فراہمی یقینی نہ بنائی جا سکی۔علاوہ ازیں چینی کی قلت بھی دور نہ ہوسکی، قیمتیں بھی بدستور 95 سے 100 پر برقرار ہیں۔ شہر میں تاحال طلب کے مطابق چینی کی سپلائی کو یقینی نہیں بنایا جاسکا۔ گزشتہ ہفتے چینی کی قیمتوں 10 سے 15 روپے فی کلوتک کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جبکہ ہول سیل مارکیٹ میں چینی 89 روپے سے لے کر 90 روپے کلو تک دستیاب ہے۔ جس سے پرچون مارکیٹ میں مقامی چینی شہریوں کو 100 روپے کلو تک فروخت کی جا رہی ہے۔ درآمدی چینی 83 روپے 50 پیسے کلو میں دستیاب ہے، تاہم شہری درآمدی چینی باریک ہونے کے باعث خریدنے سے گریزاں ہیں کیو نکہ شہریو ں نے کہا ہے کہ سستی چینی ایک تو با ریک ہے اور دوسرا اس کی مٹھا س بھی کم ہے جس کے وجہ سے یہ دوگنی استعما ل ہو تی ہے اس لئے اس سے بہتر ہے کہ مہنگی چینی ہی خرید لیں۔

مہنگائی

مزید :

صفحہ اول -