بڑھتی ہوئی فرقہ واریت اور کووڈ-19 کے حوالے سے سیمینار

بڑھتی ہوئی فرقہ واریت اور کووڈ-19 کے حوالے سے سیمینار

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)نیشنل پیس اینڈ جسٹس کونسل حکومت پاکستان کا بڑھتی ہوئی فرقہ واریت و کووڈ-19 کے خلاف این پی جے  سی حکومت پاکستان  کردار کے عنوان سے  سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔جس میں مرکزی چیئرمین میاں عبدالوحید، مرکزی انفارمیشن سکریٹری اعظم خان،یونائیٹڈ چرچ آف پاکستان کے چئرمین بشپ نزیر عالم،ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر سندھ شیخ اقبال،ڈیپٹ چیف کواڈینیٹر سید عدنان اخونزادہ این پی جے سی حکومت پاکستان کے پورے ملک بشمول سندھ ممبران اور مختلف مکتبہ و فکر سے تعلق رکھنے والوں نے شرکت کی۔میاں عبدالوحید چیئرمین این  پی جے سی حکومت پاکستان نیکہا کہ میں اور ہمارے تمام عہدیداران مرکزی حکومت اور تمام صوبائی حکومتیں اور تمام اداروں بشمول افواج پاکستان کے درمیان ایک لائیزون بنائینگے۔ملک میں نفرتوں کو ختم کرکے محبتوں کا پیغام کو عام کرینگے۔لسانی بنیادوں پر معاشرے کو تقسیم نہیں ہونے دینگے۔ ملک میں ہی نہیں بلکہ بین الااقوامی سطح پر پاکستان کے امیج کو سوفٹ بنائیں گے اور پاکستان کے دشمن یہ سن لیں کہ پاکستان کو نقصان پہنچانے کی کوئی کوشش کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے اور کشمیر و کشمیروں کی حمایت کرتے ہیں اور ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرواتے ہیں۔کشمیر بنے کا پاکستان مزید یہ کہا کہ ڈاکٹر طاہر محمود اچھے ڈاکٹر و سائنسدان جو وزیر اعظم کی گزارش پر ملک آئے اور کووڈ-19 کے خاتمے کے لئے بہترین کام کیا اور اپنی ریسرچر کووڈ-19 کے خاتمے کے لئے  پاکستانی قوم کو دی ہمارے ادارے این  پی جے سی حکومت پاکستان کے ممبران کو بھی کووڈ-19 کے خلاف موٹر تربیت دی جس سے ادارے کو کووڈ-19 کے خلاف جاری مہم میں مدد ملی۔مہمان خصوصی چیئرمین این  پی جے سی پاکستان میاں عبد الوحید نے مہمانوں و انتظامی ممبرانوں کو  ایوارڈ  تقسیم کئے اور ساتھ ساتھ گولڈ میڈل و شیلڈز بھی تقسیم کی اس کے علاوہ نوٹیفکیشن بھی جاری کئیاور معزز مہمانوں کو سندھی ٹقافتی اجرک و ٹوپی سے نواز گیا اور دیگر تحائف بھی تقسیم کئے گئے۔

مزید :

صفحہ آخر -