کس تبلیغی مرکز کے سامنے مولانا فضل الرحمان کی جائیدادیں ہیں؟ مراد سعید کا تہلکہ خیز دعویٰ

کس تبلیغی مرکز کے سامنے مولانا فضل الرحمان کی جائیدادیں ہیں؟ مراد سعید کا ...
کس تبلیغی مرکز کے سامنے مولانا فضل الرحمان کی جائیدادیں ہیں؟ مراد سعید کا تہلکہ خیز دعویٰ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر برائے مواصلات مراد سعید نے الزام عائد کیا ہے کہ ڈیرہ اسماعیل خان (ڈی آئی خان) میں تبلیغی مرکز کے سامنے بنگلہ اور مارکیٹ مولانا فضل الرحمان کے نام پر ہے، انہوں نے اسلام کا نام استعمال کرکے مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی۔

نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مراد سعید نے کہا کہ گزشتہ ہفتے میں مولانا فضل الرحمان کی جائیداد کی تفصیلات سامنے آئیں، نیب نے جائیدادوں کے حوالے سے نوٹس کیے اور سوالنامے بھی بھیجے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ مولانا فضل الرحمان کے فرنٹ مین قاری اشرف، دلاور وزیر کے نام پر جائیدادیں بنائی گئیں۔ ان کے فرنٹ مین فضل پٹواری کے نام پر زمینیں اور گن مین کے نام پر جائیدادیں خریدی گئیں۔ ڈیرہ اسماعیل خان میں تبلیغی مرکز کے سامنے بنگلہ اور مارکیٹ مولانا فضل الرحمان کی ہے، رؤف ماما اور ڈرائیور عبداللہ رحیم کے نام پر 88 کنال زمین خریدی گئی، گل ظریف کے نام پر بھی جائیدادیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے ناموس رسالت ﷺ کا مسئلہ عالمی سطح پراٹھایا جبکہ  نواز شریف کے دور میں جے یوآئی کا رہنما اسرائیل جانے کا اعتراف کرتا ہے، انہوں نے اسلام کا نام استعمال کرکے مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی۔

مراد سعید کے مطابق مولانا فضل الرحمان ہمیشہ اسرائیل اوریہودی لابی کی بات کرتے ہیں لیکن امریکی سفیر سے خود کو وزیراعظم بنانے کی درخواست کرتے ہیں، نیٹوسپلائی کے دھندے میں بھی فضل الرحمان ملوث رہے، مولانا کشمیرکمیٹی کے چیئرمین رہے لیکن مسئلے کو اجاگر نہیں کیا،54  سال میں پہلی بار اقوام متحدہ اسمبلی میں مسئلہ کشمیرپربات ہوئی۔

مزید :

قومی -