فائزر اور بائیوٹیک کے بعد موڈرنا کی کورونا ویکسین بھی سپین پہنچ گئی

فائزر اور بائیوٹیک کے بعد موڈرنا کی کورونا ویکسین بھی سپین پہنچ گئی
فائزر اور بائیوٹیک کے بعد موڈرنا کی کورونا ویکسین بھی سپین پہنچ گئی

  

بارسلونا(ارشد نذیر ساحل )فائزرز اور بائیوٹیک کورونا ویکسین کے بعد امریکی کمپنی موڈرنا کی تیار کردہ ویکسین بھی سپین پہنچ گئی ہے۔ویکسین کی پہلی کھیپ آج صبح بیلجیم سے سپین پہنچی ہے۔ آنے والے چند دنوں میں ویکسین صوبوں کو مہیا کی جائے گی۔

پہلے مرحلے میں چھ لاکھ میں سے تین لاکھ 57ہزار خوراکیں آئی ہیں، اس طرح سپین میں کورونا کے خلاف 2 ویکسین دستیاب ہو گئی ہیں۔ موڈرنا کمپنی کی ویکسین کو محفوظ کرنا اور ایک جگہ سے دوسری جگہ پہنچانا فائزر ویکسین کی نسبت زیادہ آسان ہے، کیونکہ فائزر کی ویکسین کو منفی 70ڈگری پر محفوظ رکھنا ہوتا ہے جبکہ موڈرنا صرف منفی 20 ڈگری پربھی محفوظ رہ سکتی ہے۔ وزارت صحت سپین کے مطابق آنے والے چھ یاسات ہفتوں تک چھ لاکھ سے زائد خوراکیں سپین پہنچیں گی۔نئی ویکسین کے آمد کے باوجود سپین میں ویکسین لگانے کی مہم پہلے سے طے کردہ منصوبے کے تحت جاری رہے گی۔ایک شہری کو فائزرزاور بائیو ٹیک کی ویکسین کی دو خوراکیں لگائی جارہی ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -