ڈھائی سال بعد بھی پاور سیکٹر کے اداروں کےسربراہ تعینات نہ ہوسکے

ڈھائی سال بعد بھی پاور سیکٹر کے اداروں کےسربراہ تعینات نہ ہوسکے
ڈھائی سال بعد بھی پاور سیکٹر کے اداروں کےسربراہ تعینات نہ ہوسکے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو ڈھائی سال ہوگئے تاہم ابھی تک پاور سیکٹر کے متعدد اداروں کے سربراہان تعینات نہ ہوسکے۔ بجلی کی تقسیم کار کمپنیاں، پیداواری وترسیلی کمپنیاں سربراہان سےمحروم ہیں۔ سینٹرل پاورجنریشن کمپنی کو ایڈہاک ازم پرچلایاجارہاہے۔ 

این ٹی ڈی سی،این پی سی سی کوایڈہاک ازم پرچلایاجارہاہے،این ٹی ڈی سی جولائی 2017 سے مستقل سربراہ سےمحروم ہے،این ٹی ڈی سی ملک بھرمیں بجلی کی ترسیل کی ذمہ دارہے۔ این پی سی سی میں کئی سال سےمستقل سربراہ تعینات نہیں کیاگیا۔ 

بجلی کی تمام تقسیم کارکمپنیاں مستقل سربراہان سےمحروم ہیں، آئیسکو، لیسکو، فیسکو، گیپکو کو مستقل سربراہان کےبغیرچلایاجارہاہے۔ میپکو،کیسکو، ٹیکسو، پیسکوبھی مستقل سربراہان سےمحروم ہیں۔ 

مزید :

قومی -