انڈونیشیا میں مسافر طیارے کو حادثہ، اس ایئرلائن کے بارے میں حیران کن حقائق سامنے آگئے، نئی بحث چھڑ گئی

انڈونیشیا میں مسافر طیارے کو حادثہ، اس ایئرلائن کے بارے میں حیران کن حقائق ...
انڈونیشیا میں مسافر طیارے کو حادثہ، اس ایئرلائن کے بارے میں حیران کن حقائق سامنے آگئے، نئی بحث چھڑ گئی

  

جکارتہ(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ دنوں انڈونیشیاءکی فضائی کمپنی سری ویجایا ایئر کا ایک طیارہ سمندر میں گر کر غرق ہو گیا جس میں 60مسافر سوار تھے۔ اس حادثے کی تحقیقات میں ایئرلائنز کے متعلق حیران کن حقائق سامنے آگئے ہیں اور ایک نئی بحث چھڑ گئی ہے۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق تحقیقات میں معلوم ہوا ہے کہ سری ویجایا ایئر کی کاروباری حکمت عملی یہ ہے کہ وہ انتہائی پرانے طیارے بہت کم قیمت پر حاصل کرتی ہے اور ایسے روٹس پر پروازیں چلاتی ہے جن پر دیگر فضائی کمپنیاں اپنی پروازیں نہیں چلاتیں۔

اس کمپنی نے 2003ءمیں صرف ایک طیارے سے آپریشنز سروع کیے اور آج وہ ایک ’مڈ مارکیٹ ‘ (Mid-market)ایئرلائن بن چکی ہے جو چند بین الاقوامی پروازیں بھی چلا رہی ہے۔ گزشتہ ہفتے اس کے جس طیارے کو حادثہ پیش آیا وہ بھی 27سال پرانا بوئنگ طیارہ تھا۔ واضح رہے کہ سمندر میں گرنے والے اس طیارے کا ملبہ سمندر کی تہہ میں تلاش کیا جا چکا ہے۔ جہاز کے ٹکڑے سمندر کی تہہ میں ایک محدود علاقے میں پھیلے ہوئے پائے گئے ہیں۔ ان ٹکڑوں کے ساتھ مسافروں کی لاشوں اور کپڑوں کے ٹکڑے بھی غوطہ خوروں کو ملے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -