ہم جنس پرستوں کے جواب میں’عام عوام‘ بھی میدان میں آگئی، اہم نشانی متعارف

ہم جنس پرستوں کے جواب میں’عام عوام‘ بھی میدان میں آگئی، اہم نشانی متعارف
ہم جنس پرستوں کے جواب میں’عام عوام‘ بھی میدان میں آگئی، اہم نشانی متعارف

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں ہم جنس پرستی کو قانونی قرار دیئے جانے کے بعددنیا بھر کے ہم جنس پرستوں نے اپنا ایک جھنڈا بھی تیار کر لیا ہے جو قوس قزح کے 7رنگوں پر مشتمل ہے۔ امریکہ میں اسے قانونی بنائے جانے کے بعد روس میں بھی ہم جنس پرستوں کی طرف سے مظاہروں میں شدت آ گئی تھی جو اپنی حکومت پر دباؤ بڑھا کر روس میں بھی اس لعنت کو قانونی قرار دلوانا چاہتے ہیں لیکن روسی حکومت کی طرف سے ان مظاہرین کو واضح پیغام دے دیا گیا ہے۔ روس میں اسی ہفتے ایک فیملی فیسٹیول ہونے جا رہا ہے جس کا نام ’’محبت اور وفاداری‘‘رکھا گیا ہے، روسی حکومت نے ہم جنس پرستوں کے جھنڈے کے مقابلے میں اس فیسٹیول کے لیے ایک پرچم بنا دیا ہے جو روس کے ہم جنس پرستوں کے لیے پیغام ہے کہ ان کی یہاں نہیں چلے گی۔ روسی حکومت کے بنائے گئے جھنڈے کا پس منظر بالکل نیلا ہے اور اس پر ایک میاں اور بیوی اپنے 3بچوں کے ہاتھ پکڑے کھڑے ہیں، ان کے نیچے روسی زبان میں لکھا ہے کہ ’’یہ حقیقی خاندان ہے۔‘‘

مزید پڑھیں:نوجوان لڑکی کو انوکھی بیماری، تندرست رہنے کیلئے اپنے ہمسفر کو بانجھ بنا ڈالا

ماسکو ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق روس میں یہ فیملی فیسٹیول 2008سے شروع ہوا جو ہر سال 8جولائی کو منایا جاتا ہے، اس دن روس کے 4علاقوں تولا، امور، کلوگا اور کربان میں طلاق دینے پر پابندی عائد ہوتی ہے۔ اس فیسٹیول کا مقصد حقیقی روایتی خاندانی نظام کا فروغ ہے۔اگرچہ روس نے ہم جنس پرستی کے خلاف سخت رویہ اپنا رکھا ہے لیکن سیاستدانوں میں بھی ہم جنس پرستی کی حمایت کسی نہ کسی سطح پر موجود ہے۔ حکومتی جماعت کے رکن وائٹلے میلونوو کا کہنا تھا کہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک جس طرح ہم جنس پرستی کی حمایت کر رہی ہے، روس میں اس پر پابندی لگا دینی چاہیے۔ وائٹلے کو جواب دیتے ہوئے ایک روسی سینیٹر کونسٹانٹن ڈوبرائنن نے کہا کہ فیس بک پر نہیں بلکہ خود وائٹلے پر پابندی لگائی جانی چاہیے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس