اربوں روپے کی کرپشن لیکن پولیس ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام، یہ بھارتی شہری ہر مرتبہ پولیس کی آمد پر کیا بہانہ بنا کر بچ نکلتا ہے؟ جان کر ہنسی نہ رُکے

اربوں روپے کی کرپشن لیکن پولیس ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام، یہ بھارتی شہری ...
اربوں روپے کی کرپشن لیکن پولیس ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام، یہ بھارتی شہری ہر مرتبہ پولیس کی آمد پر کیا بہانہ بنا کر بچ نکلتا ہے؟ جان کر ہنسی نہ رُکے

  

احمد آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اور بھارت میں جہاں دیگر بہت سی باتیں مشترک ہیں وہیں ان کے سیاستدانوں، بزنس مینوں اور اشرافیہ کی کرپشن بھی ایک قدرِ مشترک ہے۔ اس کے بعد بھی ایک قدر مشترک ہے کہ جب ان دونوں ممالک میں بڑے بڑے کرپشن کنگز پر ہاتھ ڈالا جانے لگتا ہے تو وہ فوری طور پر بیمار ہو کر ہسپتال پہنچ جاتے ہیں اور پھر نظریں بچا کر بیرون ملک فرار ہو جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں:سابق وزیراعظم شوکت عزیز ایک بھارتی بزنس مین کے ایڈوائزہیں: حمید گل

گزشتہ دنوں بھارت کے ایک بزنس مین نے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے اہلکاروں کے ہاتھوں گرفتاری سے بچنے کے لیے انوکھا کام کیا، جو شاید ان دونوں ملکوں میں پہلے کسی نے نہ کیا ہو۔ بزنس مین دُلراج جین پر 3 5ارب95کروڑ روپے ’’حوالے‘‘ کے ذریعے بیرون ملک بھجوانے کا الزام تھا۔ جب اہلکار اسے گرفتار کرنے اس کے گھر پہنچے تو اسے کچھ دیر قبل ہی اس کی اطلاع ہو چکی تھی اور اسی دوران اس نے چینی کھا کھا کر سچ مچ اپنی شوگر اتنی بڑھا لی کہ اہلکاروں کو اسے گرفتار کرکے حوالات پہنچانے کے بجائے ہسپتال لیجانا پڑ گیا۔ ہسپتال میں اس نے کسی طریقے سے فرار کی راہ نکالی اور بھاگ نکلنے میں کامیاب ہو گیا اور تاحال گرفتار نہیں کیا جا سکا۔ بھارتی اخبار کا کہنا ہے کہ یہ حربہ دلراج جین نے دوسری مرتبہ کامیابی سے آزمایا۔ واضح رہے کہ منی لانڈرنگ کی خصوصی عدالت کی طرف سے دُلراج جین کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے جا چکے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس