پبلک سیکٹر کمپنیوں کی کارپوریٹ گورننس رولز پر عمل دارآمد کی شرح 37فیصد تک پہنچ گئی

پبلک سیکٹر کمپنیوں کی کارپوریٹ گورننس رولز پر عمل دارآمد کی شرح 37فیصد تک ...

اسلام آبا د (آئی این پی) سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کی جانب سے سہولت اور آگاہی فراہم کرنے کے مسلسل اقدامات اور انفورسمنٹ ایکشن کے نتیجے میں پبلک سیکٹر کمپنیوں کی جانب سے کارپوریٹ گورننس رولز2013 پر عمل درآمد میں خاطر خواہ فیصد تک اضافہ دیکھا گیا ہے۔ گزشتہ سال جون تیس تک چودہ فیصد پبلک سیکٹر کمپنیوں نے کارپوریٹ گورننس رولز پر عمل درآمد کی رپورٹ جمع کروائی تھی جو کہ اس سال تیس جون 2015 تک بڑھ کر 37فیصد ہو گئی ہے، یعنی ان کمپنیوں کی جانب سے کمپلائنس میں تئیس فیصد اضافہ ہوا ہے۔ سیکورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان کی جانب سے حکومت کی ملکیت میں چلنے والی کمپنیوں میں گڈ گورننس اور ان کمپنیوں کی کارکردگی بہتر بنانے کے لئے کارپوریٹ گورننس رولز 2013 جاری کئے گئے تھے۔ کارپوریٹ گورننس رولز میں پبلک سیکٹر کمپنیوں کومتعلقہ سیکٹر کے ماہرین پر مشتمل ایک متناسب اور خودمختاربورڈآف ڈئریکٹرز کی تشکیل ‘ کمپنی کی چئیر مین اور چیف ایگزیکٹو کے عہدے اور دفتر کو الگ کرنا ‘ سالانہ کرکردگی کے جائزے کے لئے طریقہ کار اور پالیسی کی تشکیل ‘ بورڈ کے تحت خصوصی کمیٹیوں کی تشکیل اور کمپنیوں کی کارکردگی اور شفافیت پیدا کرنے کے دیگر اقدامات اٹھانے ہیں۔ ان کمپنیوں کو ان رولز پر عمل درآمد کی رپورٹ سالانہ گوشواروں کے ساتھ ایس ای سی پی کو جمع کروانے کی ہدایت کی گئی۔ ان رولز کو جاری کرنے کے بعد ایس ای سی پی نے پبلک سیکٹر کمپنیوں میں ان پر عمل درآمد سے متعلق آگاہی پیدا کرنے کے لئے کئی اقدامات کئے ۔ مختلف کمپنیوں میں ورک شاپس اور سیمینار منعقد کئے گئے ‘ رہنما کتابچے فراہم کئے گئے اوران رولز پر عمل درآمد کے لئے کمپنیوں کونوٹس بھی جاری کئے گئے۔ اس آگاہی پروگرام کے بعدکارپوریٹ رولزکی کمپلائنس رپورٹ جمع نہ کروانے والی ایک سو اٹھاون (158) کمپنیوں کو ان کی متعلقہ وزارتوں کے علم میں لاتے ہوئے اظہار وجوہ کے نوٹس جاری کئے گئے۔

اظہار وجوہ کے نوٹس جاری ہونے کے بعد پبلک سیکٹر کی مزید 59کمپنیوں نے کارپوریٹ گورننس رولز کی کمپلائنس رپورٹ جمع کروا دی ہے۔ کارپوریٹ گورننس رولز کے حوالے سے ایس ای سی پی اپناانفورسمنٹ ایکشن اور آگاہی پروگرام جاری رکھے گا جس سی امید کی جاتی ہے کہ پبلک سیکٹر کمپنیوں میں کارپوریٹ گورننس رولز پر عمل درآمد کی شرح میں مزید اضافہ ہو گا جس سے ان کمپنیوں کی کارکردگی میں اضافہ ہو گا۔

مزید : کامرس