ملک میں سود سے پاک معاشی نظام رائج کرنا ہوگا،ملی مجلس شرعی

ملک میں سود سے پاک معاشی نظام رائج کرنا ہوگا،ملی مجلس شرعی

لاہور(پ ر ) ملی مجلس شرعی نے کہا ہے کہ ملک سے جب تک سودی نطام کا خاتمہ نہیں ہوگا حکمرانوں اور عوام کی معاشہ مشکلات میں کمی ہو گی ،اسلام کے نام پر حاصل کئے گئے ملک میں سود سے پاک معاشی نظام رائج کرنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار ملی مجلس شرعی کے مرکزی صدر مفتی محمد خان قادری ، پروفیسر ڈاکٹر محمد امین، جسٹس (ر) میاں نزیر اختر،علامہ خلیل الرحمن قادری، عالمی انجمن خداام الدین کے میاں محمد اجمل قادری،تنظیم اسلامی کے حافظ عاکف سعید،علامہ مولانا زاہدالراشدی،علامہ احمد علی قصوری،سید عبدالوحید شاہڈاکٹر فرید احمد پراچہ، مولانا راغب حسین نعیمی،قاری احمدوقاص ودیگر نے کیا۔

جامعۃ المتنظر کے علامہ نیازشاہ نقوی سمیت دیگر نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔مقررین نے مزید کہا کہ مدارس دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں ،دینی اداروں کے خلاف عالم کفر کا اتحاد بے معنی نہیں وہ مسلمانوں کو ان کی اصل تعلیمات سے محروم کرنا چاہتے ہیں، اس وقت پاکستان میں تعلیم کا بھرم صرف دینی مدارس سے قائم ہے، اگر حکمرانوں نے ان کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے تو خدانخواستہ یہ ملک تاشقند اور سمرقند بن جائے گا،عالم کفر کی اس سازش کے خلاف دینی قوتوں کو اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا ہوگا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4