اردوزبان رائج کرنے کے حوالے سے ایگزیکٹوآرڈرپردستخط خوش آئندہیں، ڈاکٹر وسیم

اردوزبان رائج کرنے کے حوالے سے ایگزیکٹوآرڈرپردستخط خوش آئندہیں، ڈاکٹر وسیم

لاہور(جنرل رپورٹر)پارلیمانی لیڈرصوبائی اسمبلی وامیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اخترنے وزیراعظم کی جانب سے سرکاری اداروں میں اردوزبان رائج کرنے کے حوالے سے ایگزیکٹوآرڈرپردستخط کوخوش آئند قراردیتے ہوئے کہاہے کہ اردوکوبہت پہلے سرکاری زبان کادرجہ مل جانا چاہئے تھا۔1977کے آئین میں اس امر کی یقین دھانی کروائی گئی تھی کہ آنے والے15سالوں میں پاکستان کی سرکاری زبان اردو ہوگی مگربدقسمتی سے آج تک اس کے نفاذ کے حوالے سے خاطر خواہ اقدامات نہ کئے گئے۔اردوہماری قومی زبان ہے جو وحدت کی علامت ہے اس کے فروغ کیلئے ہم سب کو مل کرکوشش کرنی چاہئے۔انہوں نے کہاکہ دنیا میں وہی قومیں کامیابی ہوتی ہیں جواپنی مادری زبان کونہیں چھوڑتیں۔تمام علوم کوقومی زبان میں پڑھانے کابندوبست کیاجاناچاہئے۔سی ایس ایس،این ٹی ایس،پی سی ایس سمیت تمام ٹیسٹ اپنی زبان میں ہونے سے کامیابی کی شرح میں اضافہ ہوگا۔قیام پاکستان کے بعد قائد اعظم محمد علی جناحؒ نے ڈھاکہ یونیورسٹی میں خطاب کرتے ہوئے وشگاف الفاظ میں کہاتھاکہ پاکستان کی قومی زبان اردوہوگی۔وفاق کی تمام اکائیوں کومتحد رکھنے کیلئے قومی زبان کاکلیدی کردار ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ جورپورٹ حکومت نے سپریم کورٹ کے سامنے پیش کی ہے اس پرمن وعن عملدرآمدکرتے ہوئے اردوزبان کے نفاذکویقینی بنایاجائے۔تمام سرکاری اداروں کوپابند کیاجائے کہ وہ بغیر کسی لیت ولعل کے تین ماہ کے اندر اندر اپنی پالیسیوں اور تمام قوانین کااردوزبان میں ترجمہ شائع اور ویب سائٹس پرنشر کیاجائے۔قومی میڈیا کو اس حوالے سے اہم ذمہ داری اداکرنی ہوگی۔ایسے انگریزی کے الفاظ جن کے مترادفات اردوزبان میں موجود ہیں کونشرکرنے سے اجتناب کیاجاناچاہئے۔اگرہم نے دنیا میں ترقی وخوشحالی کی منزل طے کرنی ہے توہمیں اپنی زبان اور اپنے کلچر کونہیں چھوڑناچاہئے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1