بھارت نے کشمیریوں کودبانے کیلئے کئی کالے قانون بنا رکھے ہیں،ناصر اقبال

بھارت نے کشمیریوں کودبانے کیلئے کئی کالے قانون بنا رکھے ہیں،ناصر اقبال

لاہور (خبر نگار خصوصی)ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدور فاروق چوہان ،تنویرخان،آصف چٹھہ ،میاں زاہدلطیف،صدریوکے رانابشارت علی خاں،صدرمدینہ منورہ سرفرازخان نیازی ،صدرپنجاب یونس ملک،نائب صدورشیخ طلال امجد، مہرمحمدسلیم،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو اورصدر فیصل آبادندیم مصطفی نے کہا ہے کہ گولی اورگالی مودی سرکارکاٹریڈمارک ہے۔ بھارت نے کشمیریوں کودبانے کیلئے اب تک کئی کالے قانون بنائے،مقتدرقوتوں کو ان متنازعہ قوانین کیخلاف آوازاٹھاناہوگی۔بھارتی جمہوریت شیطانی آمریت سے بدترہے،شدت پسندنریندرمودی بیگناہ کشمیریوں کے خون سے ہولی کھیلنا بندکردے کیونکہ ان کاروشن مستقبل پاکستان کے ساتھ ہے۔بھارت دنیاکی سب سے بڑی انتہاپسنداورمتعصب ریاست ہے جہاں مسلمانوں سمیت کوئی اقلیت محفوظ نہیں ۔ بھارت میں گائے سمیت کئی جانوروں کی پوجاہوتی ہے جبکہ دوسرے مذاہب سے تعلق رکھنے والے انسان شب وروز تشد د،تعصب اورتوہین کانشانہ بن رہے ہیں۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ روس میں ہونیوالی حالیہ کانفرنس کے اعلامیہ میں تنازعہ کشمیر کابھرپورذکراوراس کاپائیدارراہ حل تلاش نہ کرناامن اورانسانیت کے حامیوں کیلئے بہت بڑادھچکا ہے،حکومت پاکستان کشمیر کے معاملے میں امریکہ کی مداخلت،ثالثی اوراس کادباؤمستردکردے۔تکمیل پاکستان اورجنوبی ایشیاء میں پائیدارامن کیلئے مقبوضہ کشمیر کوبھارت کے غاصبانہ قبضہ سے چھڑاناہوگا۔انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت باآسانی کشمیر سے دستبردارنہیں ہوگی ،سفارت کاری سمیت دشمن کوہرمحاذپر دوٹوک جواب دیاجائے ۔پاکستان میں مستقل ،موزوں ،موثراورمتحرک وزیرخارجہ کی کمی شدت سے محسوس کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ میاں نوازشریف تنہا سارابوجھ نہیں اٹھاسکتے ،انہیں بہتراوربروقت نتائج کیلئے اپنے اختیارات تقسیم کرناہوں گے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1