ایک سال میں پونے 3 لاکھ نئے کنکشن گیس صارفین کی تعداد 50 لاکھ سے تجاوز کر گئی

ایک سال میں پونے 3 لاکھ نئے کنکشن گیس صارفین کی تعداد 50 لاکھ سے تجاوز کر گئی

لاہور ( لیاقت کھرل) گیس ذخائر میں شدید کمی کے باوجود گیس صارفین کی تعداد 50 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔ سال 2015ء میں بھی گیس بحران شدید ترین رہے گا، ڈیمانڈ میں اضافہ، ذخائر میں شدید کمی ،ڈیمانڈ اور سپلائی میں 1400 سے 1800 ملین کیوبک فٹ کا شارٹ فال رہے گا جبکہ گیس کے موجودہ ذخائر اگلے 4 سے 6 سال تک چل سکیں گے۔ گیس حکام نے وزارت پٹرولیم کو آگاہ کر دیا ۔ وزارت پٹرولیم کو سوئی ناردرن گیس کمپنی کی جانب سے بھجوائے جانے والے خط کے مطابق گیس کے موجودہ ذخائر 1150 سے 1180 ملین کیوبک فٹ ظاہر کیے گئے ہیں ۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایس ایم ایس گرڈ اسٹیشنوں میں گیس کے ذخائر کرنے، صنعتی اور سی این جی سیکٹر سمیت پاور سیکٹر اور دیگر سیکٹروں میں لوڈمینجمنٹ کے تحت 3 ماہ کے لئے گیس بند رکھنے کے باوجود گیس کا شارٹ فال 1600 سے 1800 ملین کیوبک فٹ رہے گاجبکہ لائن لاسز اور گیس چوری کی روک تھام کے لئے جدید اور نئے نیٹ ورک کے لئے اربوں روپے کی ڈیمانڈ بھی کی گئی ہے ۔ گزشتہ مالی سال 2014-15ئمیں اڑھائی سے پونے تین لاکھ نئے کنکشن دینے کے باعث گیس ذخائر پر مزید بوجھ پڑا ہے اور گیس ذخائر کم جبکہ صارفین کی تعداد 50 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے جس کے باعث گیس کی ڈیمانڈ مزید بڑھی ہے، تاہم ذخائر بڑھانے کے لئے نئے گیس فیلڈز کی تلاش جاری ہے۔

گیس،صارفین

ف

مزید : صفحہ آخر