بین الاضلاعی باؤڈکیت گینگ کے10 کارندے گرفتار70 لاکھ نقدی اور مال مسروقہ بر آمد

بین الاضلاعی باؤڈکیت گینگ کے10 کارندے گرفتار70 لاکھ نقدی اور مال مسروقہ بر ...

لاہور( کرائم سیل )سی آئی اے پولیس نے ڈکیتی ،راہزنی کی وارداتیں کرنے والے بین الاضلاعی باؤ ڈکیت گینگ کے 10 ڈاکوؤں کو گرفتار کر کے ان سے 70 لاکھ روپے مالیت کی نقدی ،زیورات ، موٹر سائیکلیں ، گاڑیاں ،دیگر قیمتی سامان اور ناجائز اسلحہ برآمد کر لیا ۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ ملزمان پوش علاقوں میں مالدار گھروں کی ریکی کر کے یا ان گھروں میں اپنے ساتھیوں کو گھریلوں ملازم کے طور پر نوکر ی دلوا کر ان کے ذریعے اہلخانہ کے متعلق مکمل معلومات حاصل کرنے کے بعد واردات کی منصوبہ بندی کرتے اور ڈکیتی کے دوران کئی کئی گھنٹے اہل خانہ کو یرغمال بنا کر تسلی اور اطمینان سے واردات کرتے ۔ ملزمان دوران واردات مزاحمت پر متعدد شہریوں کوزخمی بھی کر چکے ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر)محمد امین وینس نے شہر میں ہاؤس رابری کی پہ در پہ وارداتوں کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشنز ، انویسٹی گیشن اور ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک کو ان وارداتوں کی روک تھام اور ان میں ملوث ڈاکوؤں اور منظم گروہوں کی گرفتاری کی ہدایات جاری کیں۔ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک کی سربراہی میں پولیس ٹیم نے گذشتہ 15 روز کے دوارن ہونے والی ہاؤس رابری کی وارداتوں کے مختلف مدعیوں اوردیگر خفیہ ذرائع سے حاصل ہونے والی معلومات کی روشنی میں شب و روز کی محنت اور پیشہ وارانہ مہارت کا مظاہرہ کرتے ہوئے بین الاضلاعی باؤ ڈکیت گینگ کے سرغنہ عبدالجبار عرف باؤ سمیت 10 ڈاکوؤں بشارت عرف بشارتی ، اشرف عرف کیلی ، عمران عرف اصغر، ناصر ، عباس عرف باسو، شکیل احمد ، عتیق الرحمن ، یسین عرف بھلی اور عمرا ن اشرف کو گرفتار کر کے ان کی نشاندہی پر لاہور ،قصور ، اوکاڑہ اور شیخوپورہ سے مختلف وارداتوں میں لوٹے ہوئے 33 لاکھ روپے نقدی ، 20 تولے زیورات ،ہنڈ اسٹی کار، موٹر سائیکلیں ، قیمتی گھڑیاں ، کیمرے ، دیگر قیمتی اشیاء اور ناجائز اسلحہ برآمد کیا ہے ۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ ملزمان انسداددہشت گردی کے سابق جج خواجہ فہیم ، معروف بزنس مین آصف رحمان اور محمد اعظم سمیت ڈیفنس اور دیگر پوش علاقوں کے مال دار گھروں میں وارداتیں کر چکے ہیں۔ گروہ کے تمام ملزمان کا تعلق ضلع قصورسے ہے جنہوں نے لاہو ر میں ستوکتلہ اور فیکٹری ایریا کے علاقے میں فلیٹ کرائے پر لے رکھے تھے اور کچھ وارداتوں کے بعد ملزمان قصور چلے جاتے تھے۔ دوران تفتیش ملزموں نے تھانہ کوٹ لکھپت ، ستوکتلہ،ڈیفنس اے، فیکٹری ایریا، جنوبی چھاؤنی ، ہربنس پورہ نواب ٹاؤن، مغلپورہ ، جوہر ٹاؤن، گلبرگ،مصطفیٰ ٹاؤن ، شمالی چھاؤنی ، گڑھی شاہو، واحدت کالونی ، ٹاؤن شپ اور نشتر کالونی کے علاوہ ضلع قصور ، اوکاڑہ اور شیخو پورہ میں ڈکیتی ، راہزنی اور ہاؤس رابری کی70 سے زائد وارداتوں کا اعتراف کیا ہے ۔ ملزمان سابقہ ریکارڈ یافتہ ہیں جو جیل سے رہا ہوتے ہی دوبارہ وارداتیں شروع کر دیتے ہیں ۔ گروہ کا سرغنہ عبدالجبار عرف باؤ اور اس کے دیگر 6 ساتھی بشارت عرف بشارتی، اشرف عرف کیلی ،عمران عرف اصغر، ناصر ، یسین عرف پھلی اور عتیق الرحمن ڈکیتی اور راہزنی کے درجنوں مقدمات میں اشتہاری ہیں اور لاہور اور قصور پولیس کو انتہائی مطلوب ہیں ۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن رانا ایاز سلیم نے گھروں میں وارداتیں کرنے والے منظم ڈکیت گروہ کی گرفتاری پر پولیس ٹیم کے لئے نقد انعامات اور تعریفی اسناد دینے کا اعلان کیا ہے ۔

مزید : علاقائی