جمائمہ کا قبول اسلام ایک ”پاسنگ فیز“ تھا: نجم سیٹھی

جمائمہ کا قبول اسلام ایک ”پاسنگ فیز“ تھا: نجم سیٹھی
جمائمہ کا قبول اسلام ایک ”پاسنگ فیز“ تھا: نجم سیٹھی

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) معروف صحافی نجم سیٹھی نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی سابق اہلیہ جمائمہ خان کا قبول اسلام ایک ”پاسنگ فیز“ تھا۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی کے ایک پروگرام میںگفتگو کرتے ہوئے نجم سیٹھی نے کہا کہ ان کے عمران خان کے ساتھ بہت اچھے تعلقات تھے۔

جب عمران خان نے جمائمہ خان سے شادی کی تو ان کے دوستوں اور سیاسی جماعتوں نے انہیں کڑی تنقید کا نشانہ بنایا کہ آپ نے تو کسی مڈل کلاس لڑکی سے شادی کرنے کی بات کی تھی اور وقت آنے پر ایک انگریز سے شادی کر لی ہے۔ نجم سیٹھی نے کہا کہ جب سب لوگ عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنا رہے تھے تو اس وقت میں نے یہ سوچ کر انہیں سپورٹ کیا کہ یہ عمران خان کا حق ہے اور جب ”پیار ہو گیا تو پھر ڈرنا کیا“۔

نجم سیٹھی نے مزید کہا کہ عمران خان اپنی اہلیہ کے ہمراہ چند گنے چنے افراد کے گھر جاتے تھے جن میں سے ایک گھر میرا بھی تھا۔ انہوں نے کہا کہ شادی کے بعد جمائمہ خان دوپٹہ اوڑھتی اورسفید لباس پہنتی تھیں جبکہ اسلام پر مضمون بھی لکھنا شروع کر دیا تھا۔ اس پر تھوڑا سا کھٹکا تو ہوا کہ یہ راتوں رات مسلمان بن گئی ہیں لیکن پھر یہ سوچا کہ قدرت نے اچھا کیا ہے اور یہ اچھی بات ہے، ہم کون ہوتے ہیں شک کرنے والے لیکن یہ تو بعد میں پتہ چلا کہ وہ بھی ایک ”پاسنگ فیز“ تھا۔

مزید : لاہور