اردو یونیورسٹی کے لاہور کیمپس کا تنازع ،ہائی کورٹ نے صدر کو فیصلے کی ہدایت کردی ،ایل ایل ایم کا رزلٹ روک دیا

اردو یونیورسٹی کے لاہور کیمپس کا تنازع ،ہائی کورٹ نے صدر کو فیصلے کی ہدایت ...
اردو یونیورسٹی کے لاہور کیمپس کا تنازع ،ہائی کورٹ نے صدر کو فیصلے کی ہدایت کردی ،ایل ایل ایم کا رزلٹ روک دیا

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے وفاقی اردو یونیورسٹی کے لاہور کیمپس کے خلاف دائر درخواست نمٹاتے ہوئے یونیورسٹی کے چانسلر صدر مملکت کو لاہور کیمپس کے خلاف آنے والی درخواستوں پر 3 ماہ میں فیصلہ کرنے کی ہدایت کردی ، دوران سماعت وفاقی سیکرٹری تعلیم کی جانب سے عدالت کو آگاہ کیا گیا کہ سیکرٹری تعلیم نے معاملے کی مکمل انکوائری کی ہے اور انکوائری میں ثابت ہو چکا ہے کہ وفاقی اردو یونیورسٹی کا لاہور کیمپس سینڈیکیٹ اور سینٹ کی منظوری اور ہائیر ایجوکیشن سے این او سی حاصل کئے بغیر قائم کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی کے مالی معاملات میں شفافیت بھی مد نظر نہیں رکھی گئی اور معیاری تعلیم کی فراہمی کی بجائے طالبعلموں کا مستقبل داﺅ پر لگا دیا گیا۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ یونیورسٹی کے چانسلر قواعد کو نظر انداز کرنے پر پہلے ہی وائس چانسلر اور رجسٹرار کے خلاف کاروائی کی ہدایت کر چکے ہیں۔ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے نمائندے نے عدالت کو آگاہ کیا کہ لاہور کیمپس کے قیام کے لئے ایچ ای سی سے این او سی نہیں لیا گیا،ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے پاس بوگس یونیورسٹیوں کے خلاف کارروائی کا کوئی اختیار نہیں ہے لہٰذا سی بناءپر وفاقی اردو یونیورسٹی کے خلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔جس پر عدالت نے وفاقی اردو یونیورسٹی کے لاہور کیمپس کے خلاف دائر درخواست نمٹاتے ہوئے یونیورسٹی کے چانسلر صدر مملکت کو لاہور کیمپس کے خلاف آنے والی درخواستوں پر تین ماہ میں فیصلہ کرنے کی ہدایت کر دی۔عدالت نے چانسلر کا فیصلہ آنے تک ایل ایل ایم کے امتحانی نتائج بھی روکنے کا حکم دے دیا۔

مزید : لاہور