جوڈیشل الاﺅنس کیس :ہائی کورٹ نے سیکرٹری خزانہ ،اے جی پنجاب کو طلب کرلیا

جوڈیشل الاﺅنس کیس :ہائی کورٹ نے سیکرٹری خزانہ ،اے جی پنجاب کو طلب کرلیا
جوڈیشل الاﺅنس کیس :ہائی کورٹ نے سیکرٹری خزانہ ،اے جی پنجاب کو طلب کرلیا

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے جوڈیشل الاﺅنس کے لئے جاری فنڈز روکے جانے کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سیکرٹری خزانہ پنجاب اور اکاوئنٹنٹ جنرل پنجاب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے پیش ہونے کا حکم دے دیا، عدالت نے ریمارکس دیئے کہ عدلیہ اپنے مالی معاملات میں خود مختار ہے ،آئین میں واضح ہے کہ عدالت کے مالی معاملات پر اسمبلی میں بات تک نہیں کی جائے گی مگر یہاں الٹی گنگا بہہ رہی ہے اورجوڈیشل الاﺅنس کی رقم جاری کرنے کے باوجود روک لی گئی ہے ۔عدالتی سماعت کے موقع پر درخواست گزار عدالتی ملازمین کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ عدالتی حکم کے باوجود ملازمین کو واجبات اور الاونسز فراہم نہیں کئے جا رہے جو کہ واضح طور پر توہین عدالت ہے۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ سیکرٹری خزانہ نے حکومت پنجاب کی جانب سے الاونس جلد فراہم کرنے کی عدالت میں یقین دہانی کرائی تھی جس کے بعدمحکمہ خزانہ پنجاب نے جوڈیشل الاونس اور واجبات کی تیس کروڑ روپے کی رقم جاری کی مگر یہ رقم عدالتی ملازمین کوان کی تنخواہ کے ساتھ ضم کر کے دینے کی بجائے روک لی گئی ہے۔جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ عدالتی حکم امتناعی ختم ہونے کے باوجود رقم کیوں روکی گئی ،سپریم کورٹ سمیت چاروں ہائیکورٹس کے ملازمین کو عدالتی الاونس فراہم کیا جا رہا ہے مگر پنجاب میں انہیں عدالتی الاﺅنس نہ دے کر امتیازی سلوک کیوں کیاجا رہا ہے۔ عدالت نے توہین عدالت کی درخواست پر سیکرٹری خزانہ پنجاب اور اکاﺅٹنٹ جنرل پنجاب کو 22جولائی کے لئے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب سمیت طلب کر لیا۔

مزید : لاہور