شاہ محمود قریشی کی مجلس وحدت مسلمین کے بھوک ہڑتالی کیمپ آمد،اظہار یکجہتی

شاہ محمود قریشی کی مجلس وحدت مسلمین کے بھوک ہڑتالی کیمپ آمد،اظہار یکجہتی

ملتان،(پ ر)پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما شاہ محمود قریشی نے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے بھوک ہڑتالی کیمپ میں ملاقات کی۔ملاقات میں دو طرفہ دلچسپی کے امور اورملکی صورتحال پر بات چیت ہوئی۔علامہ ناصرعباس جعفری نے تحریک انصاف کے رہنما کو خیبر پخوتخواہ میں جاری شیعہ ٹارگٹ کلنگ (بقیہ نمبر44صفحہ7پر )

پر اپنی تشویش سے آگاہ کیا۔بعدازاں دونوں رہنماوں نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا ۔ملتان سے جاری بیان کے مطابق اس موقع پر شاہ محمود قریشی نے کہا مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ کی بھوک ہڑتال کو 61روز گزر چکے ہیں۔ پرامن احتجاج اور عدم تشدد کی یہ روایت لائق تحسین ہے۔اپنے حقوق کے لیے احتجاج ہر پاکستانی کا قانونی و اآئینی حق ہے۔پاکستان میں بڑھتی ہوئی فرقہ واریت ایک سوچی سمجھی چال ہے جس کا مقصدوطن عزیزکو عدم استحکام سے دوچار کرنا ہے۔فرقہ واریت اور ٹارگٹ کلنگ کاہمیں مل کر بحثیت قوم مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ علامہ راجہ ناصر عباس اور شیعہ کمیونٹی ملک کی محب وطن ہے ۔ان کو تحفظ فراہم کرنا وفاقی و صوبائی حکومتوں کی ذمہ داری ہے۔ جو قوتیں ہمیں داخلی طور پر کمزور کر نا چاہتی ہیں ہمیں ان کے عزائم کو سمجھنا ہوگا ۔ ڈیرہ اسماعیل خان میں شیعہ رہنماایڈوکیٹ شاید شیرازی کو دہشت گردی کا نشانہ بنائے جانے پرمذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ احتجاجی کیمپ میں ہم اس واقعہ پر افسوس کا اظہار کرنے حاضر ہوئے ہیں۔علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ ہمارے پرامن احتجاج کا حکومت پر کوئی اثر نہیں ۔حکمران عوامی مشکلات سے مکمل طور پر بے حس ہو چکے ہیں۔ہم ریاست کے باوفا بیٹے ہیں۔ ہم عدم تشدد کی سیاست کے قائل ہیں۔17جولائی کو ملک کے مختلف شہروں میں خواتین احتجاجی مظاہرے کریں گی۔22 جولائی کو مجلس وحدت مسلمین کے کارکنان اور شیعہ کمیونٹی اپنی اتحادی جماعتوں کے ساتھ مل کر ملک کی اہم شاہراوں کو بند کر دیا جائے گا۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی جارحیت کے حوالے سے گفتگو کرتے علامہ ناصر عباس نے مقبوضہ کشمیر میں نہتے شہریوں پر بھارتی فوج کی فائرنگ کے نتیجے میں تیس سے زائد قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے ریاستی دہشت گردی قرار دیا ہے ۔انہوں نے کہا ہے مظلوم کشمیریوں پر بھارت کی جارحانہ کاروائی انسانی حقوق کی شدید خلاف ورزی ہے۔ کشمیر کو بھارتی تسلط سے آزاد کرانے کے لیے پاکستان کو سفارتی سطح سمیت تمام عالمی فورمز پر اپنی کوششوں کو تیز کرنا ہو گا تاکہ کشمیر کے مظلوموں کو اس ظلم و بربریت سے نجات مل سکے۔علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ بھارت میں انسانی حقوق کی پامالی کے سنگین ترین واقعات عالم اقوام کی آنکھیں کھولنے کے لیے کافی ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...