سندھی مسلم سوسائٹی میں فائرنگ ، اہلکاروں نے بیان ریکارڈ کروا دیا

سندھی مسلم سوسائٹی میں فائرنگ ، اہلکاروں نے بیان ریکارڈ کروا دیا

کراچی (اسٹاف رپورٹر) کراچی کے علاقے سندھی مسلم سوسائٹی میں فائرنگ کرنیوالے سی ٹی ڈ ی اہلکاروں نے ابتدائی بیان ریکارڈ کروا دیا۔ تفتیشی حکام کے مطابق تین اہلکاروں کا اسلحہ ضبط کرلیا گیا ہے۔سندھی مسلم سوسائٹی میں اتوار کی شب پیش آنے والے واقعے کا ڈراپ سین سی ٹی ڈی پولیس اہلکاروں کے ابتدائی بیانات ریکارڈ۔ مشکوک کار کو دیکھ کر کانسٹیبل کلیم اللہ نے گاڑی پر فائرنگ کی۔ گاڑی میں موجود دلنواز اور ابرار سے کوئی اسلحہ نہ ملا تو ہم گھبرا گئے۔ اہلکار راشد اور ندیم نے موقع سے فرار ہونے کا مشورہ دیا۔ ہم لوگ فرار ہوکر سی ٹی ڈی لائن پہنچ گئے۔ایس ایس پی راجہ عمر خطاب کے مطابق اہلکاروں نے بتایا کہ سی ٹی ڈی موبائل ڈیوٹی ختم کرکے لکی اسٹار سے گزر رہی تھی کہ اچانک کار میں سے ایک شخص باہر لٹکا نظر آیا جو مدد کے لیے پکار رہا تھا۔ کار کی رفتار تیز تھی جس نے تین چار موٹرسائیکل سواروں کو ٹکر بھی ماری۔ایس پی جمشید ڈاکٹر فہد کا کہنا تھا موبائل میں موجود سی ٹی ڈی اہلکاروں نے مشکوک کار کا تعاقب کیا اور کار کو روکنے کی کوشش کی تاہم کار نہیں رکی۔ جس پر اہلکاروں نے فائرنگ کردی۔دوسری جانب واقعے میں زخمی ہونیوالے دلنواز کا کرائم ریکارڈ حاصل کرلیا ہے۔ عادی مجرم دلنواز بدنام نوسرباز نکلا جس کی گرفتاری کی خبر سن کر چند افراد فیروزآباد تھانے بھی پہنچے اور دل نواز کی جعل سازی سے متعلق بیان بھی ریکارڈ کرائے۔دو روز قبل سندھی مسلم سوسائٹی میں موبائل لین دین تنازعے کے دوران پولیس اہلکاروں کی فائرنگ سے نوجوان ابرار جان بحق جبکہ خریدار دلنواز زخمی ہوگیا تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...