ڈاکٹر ذاکر نائیک کے بعد مودی حکومت کا اسد اویسی پر حملہ ، الیکشن کمیشن نے پارٹی رجسٹریشن منسوخ کر دی ،انتخابات میں حصہ نہیں لے سکیں گے

ڈاکٹر ذاکر نائیک کے بعد مودی حکومت کا اسد اویسی پر حملہ ، الیکشن کمیشن نے ...
ڈاکٹر ذاکر نائیک کے بعد مودی حکومت کا اسد اویسی پر حملہ ، الیکشن کمیشن نے پارٹی رجسٹریشن منسوخ کر دی ،انتخابات میں حصہ نہیں لے سکیں گے

  


ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک)مودی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں درندگی اور جارحیت کے بعد بھارت میں بھی مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کرنا شروع کر دیا ،ڈاکٹر ذاکر نائیک کے پیس ٹی وی پر پابندی کے بعد بھارت کے ممتاز مسلمان رہنما اسد الدین اویسی کی سیاسی جماعت ’’آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین ‘‘ کوضروری دستاویزات جمع نہ کرنے کا بہانہ بناتے ہوئے الیکشن کمیشن نے رجسٹریشن منسوخ کر دی ہے ،جس کی وجہ سے مجلس اتحادالمسلمین اب مہاراشٹر میں اگلے سال منعقد ہونے والے مقامی انتخابات میں حصہ نہیں لے سکتی ۔

بھارتی نجی ٹی وی ’’اے بی پی نیوز ‘‘ کے مطابق الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ اسد اویسی کی پارٹی کو کئی نوٹس جاری کئے گئے تھے لیکن انہوں نے ٹیکس ریٹرن یاآڈٹ رپورٹ جمع نہیں کرائی جس کی وجہ سے ’’آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین ‘‘ کی رجسٹریشن منسوخ کی گئی جبکہ اسد الدین اویسی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم نے گذشتہ 3 سال کے انکم ٹیکس ریٹرن سمیت تمام ضروری دستاویزات الیکشن کمیشن میں جمع کرائی ہیں۔مجلس کے ایک رہنما نے کہا کہ ہم حیران ہیں اور اس فیصلے سے ہمیں جھٹکا لگا ہے،ہمیں لگتا ہے کہ اس کے پیچھے کوئی سیاسی دباؤتھا۔واضح رہے کہ ’’آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین ‘‘ نے مہاراشٹرمیں2014کے اسمبلی انتخابات میں 2سیٹوں پرکامیابی حاصل کی تھی اورناندیڑاوراورنگ آبادکارپوریشن انتخابات میں بھی اسے فتح حاصل ہوئی تھی جبکہ اب وہ اگلے ممبئی میونسپل کارپوریشن انتخابات لڑنے کی تیاری کر رہی تھی۔

مزید : بین الاقوامی


loading...