عالمی برادری نے کشمیر میں قتل عام رکوانے کی کوئی کوشش نہیں کی،حکمران کشمیری عوام کی جدوجہد کو سبو تاژکررہے ہیں:سینیٹر سراج الحق

عالمی برادری نے کشمیر میں قتل عام رکوانے کی کوئی کوشش نہیں کی،حکمران کشمیری ...
عالمی برادری نے کشمیر میں قتل عام رکوانے کی کوئی کوشش نہیں کی،حکمران کشمیری عوام کی جدوجہد کو سبو تاژکررہے ہیں:سینیٹر سراج الحق

  


کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ کشمیر میں گزشتہ 70سال سے خو ن کی ہولی کھیلی جارہی ہے،مگر عالمی برادری نے کشمیر میں ہونے والے قتل عام کو رکوانے کی کوئی کوشش نہیں کی،پاکستانی حکمران بھارت سے دوستی اور تجارت کیلئے کشمیری عوام کی جدوجہد کو سبو تاژ کررہے ہیں،مسلمانوں کے ساتھ امتیازی سلوک کی وجہ سے یواین او بدنام ہو چکا ،لاکھوں کشمیر یوں کے قاتل مودی کی طرف سے کشمیر میں قتل و غارت گری پر تشو یش کا اظہار دنیا کی نظروں میں دھول جھونکنے کے مترادف ہے۔

ادارہ نور حق کراچی میں یکجہتی کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ گزشتہ چار دنوں میں آزادی کے چالیس پروانوں کو شہید اور دو ہزار سے زائد کو زخمی کر دیا گیا ہے جن میں سینکڑوں کی تعداد میں عورتیں اور بچے بھی ہیں،کشمیر میں مسلمانوں پر ظلم اور قتل و غارت کے ذمہ دار متعصب مودی ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی حکمرانوں کے دوغلے پن کی وجہ سے کشمیر کی جدوجہد آزادی کو شدید نقصان پہنچا ہے،حکمران بھارت سے دوستی اور تجارت کیلئے کشمیری عوام کی جدوجہد کو سبو تاژکررہے ہیں،کشمیر کے شہد اء کے خون سے بے وفائی اور غداری کرنے والوں کو تاریخ معاف نہیں کرے گی۔ سراج الحق نے کہا کہ کشمیر ی عوام تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں لیکن پاکستانی حکمران بھارت سے تجارت اور دوستی کے لیے کھل کر ان کی حمایت کرنے کو تیار نہیں اور دبے لفظوں اور معذرت خواہانہ انداز میں بھارتی مظالم کی مذمت کی جارہی ہے،کشمیر میں جاری قتل عام کے خلاف پاکستانی قوم جمعہ کو ملک گیر احتجاج کرے گی، کشمیر کی آزادی اب زیادہ دور کی بات نہیں،کشمیری عوام نے لاکھوں جانوں کے نذرانے پیش کر کے ثابت کردیا ہے کہ وہ بھارت سے آزادی حاصل کیے بغیر نہیں رہیں گے، کشمیری مسلمانوں کی تیسری نسل اپنے خون سے آزادی کے اس پودے کو سینچ ر ہی ہے جو ان کے بڑوں نے لگایا تھا۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر میں بھارت کی غاصب فوج نے ظلم و ستم اور تشدد کے تمام حربے آزما لیے ہیں اور اب آزادی کی تحریک کو کچلنے کے لیے لوگوں کو پکڑ پکڑ کر ان کی آنکھیں نکالی جا رہی ہے۔

مزید : قومی


loading...