اوآئی سی کشمیری عوام پر بھارتی مظالم بند کرائے،میرواعظ

اوآئی سی کشمیری عوام پر بھارتی مظالم بند کرائے،میرواعظ

سرینگر(آن لائن)مقبوضہ کشمیرمیں حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے جموں وکشمیر کے عوام کے حق خودارادیت کی حمایت جاری رکھنے پر اسلامی تعاون تنظیم کے رکن ممالک کا شکریہ اداکیا ہے ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق حریت فورم کی طرف سے سرینگر میں جاری کئے گئے ایک بیان میں کہاگیا ہے کہ میر واعظ عمر فاروق نے ان خیالات کا اظہار اوآئی سی کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر یوسف الاعثمین کے نام ایک مراسلے میں کیا جوسید فیض نقشبندی نے مغربی افریقی ملک کوٹ ڈی آئیوری کے شہر عابدجان میں او آئی سی کونسل برائے وزرائے خارجہ کے 44ویں اجلاس کے موقع پرپڑھ کر سنایا۔ میر واعظ نے اجلاس میں شرکت کی دعوت دینے پر او آئی سی کا شکریہ ادا کیا اوربھارتی حکومت کی طرف سے سفری دستاویزات جاری نہ کئے جانے کے باعث شرکت نہ کرنے پر افسوس ظاہر کیا ۔ انہوں نے کہاکہ کشمیری عوام گزشتہ 7 دہائیوں سے اقوام متحدہ کے چارٹر اور سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے تحت حاصل حق خود ارادیت کے استعمال کیلئے مسلسل جد وجہد کر رہے ہیں اور اس سلسلے میں انہوں نے بے مثال جانی ومالی قربانیاں دی ہیں۔ میرواعظ نے کہا کہ ہمارے جائز حقوق اور ہماری خواہشات و احساسات کو بھارتی فورسز طاقت کے وحشیانہ استعمال کے ذریعے دبانے میں مصروف ہیں یہاں تک کہ ہمارے بنیادی انسانی حقوق کو بھی سلب کیا گیا ہے ، پر امن مظاہرین پر طاقت کا وحشیانہ استعمال ، سیاسی رہنماؤں اور کارکنوں کی غیر قانونی نظر بندی ، ان سمیت حریت قائدین کی مسلسل گھروں میں نظربندی ، آئے روز کرفیو و قدغنوں کا نفاذاورانٹرنیٹ پر پابندی کشمیر میں روز کامعمول بن گیا ہے۔

انہوں نے 2016 کی عوامی تحریک کا تذکرہ کرتے ہوئے اپنے مراسلے میں کہا کہ اس عوامی تحریک کے دوران 120 نہتے شہریوں کو شہید کیا گیااور پیلٹ گن کے ذریعے سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں کی بینائی جزوی طور یا مکمل طور پر چھین لی گئی۔اس دوران تقریباً18 ہزار لوگ زخمی ہوئے جن میں سے درجنوں عمر بھر کیلئے معذو ر ہو گئے ۔ انہوں نے کہا کہ پیلٹ گن کے وحشیانہ استعمال کے ذریعے اس بڑی تعداد میں نہتے کشمیریوں کو بینائی سے محروم کیاگیا کہ دنیا کے مشہور اخبار ’نیویارک ٹائمز‘ نے اس سال کوڈیڈ آئیزان کشمیر (Dead Eyes in Kashmir)کا سال قراردیا ۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال آج تک بھارتی فورسز گولیوں اور پیلٹ گن کے ذریعے 55 نہتے کشمیریوں کو شہید اور سینکڑوں کو زخمی کر چکی ہے جبکہ لوگوں کی بلاجواز گرفتاری اور املاک کو تباہ کرنے کا سلسلہ بھی بدستور جاری ہے۔ میرواعظ نے کہا یہ بڑی بدقسمتی ہے کہ بھارتی حکومت کشمیر کے زمینی حقائق سے چشم پوشی کر رہی ہے اور اس کے سیاسی محرکات و انسانی پہلو کو نظر انداز کرکے صرف ظلم و تشدد اور دھونس ودباؤ کے ذریعے مسئلے کو دبانا چاہتی ہے۔انہوں نے کشمیر کے عوام نے او آئی سی کے رکن ممالک کی طرف سے کشمیریوں کے حق کی حمایت کو ہمیشہ قدرکی نگاہ سے دیکھا ہے اور اسکے لئے ان کا شکریہ ادا کیا ہے۔ انہوں نے او آئی سی سے اپیل کی کہ وہ کشمیری عوام کو درپیش مشکلات اور تکلیف دہ صورتحال سے نکالنے کیلئے کردار ادا کریں اور ان پر ظلم و تشدد بند کرانے کیلئے بھارت پر دباؤ بڑھائیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...