پانی ملک کا سب سے بڑا مسئلہ، نظر انداز نہیں کیا سکتا: چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

پانی ملک کا سب سے بڑا مسئلہ، نظر انداز نہیں کیا سکتا: چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے عدالتی احکامات کے باوجود واٹر پالیسی کی تشکیل کے حوالے سے مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس نہ بلانے پر برہمی کا اظہار کرنے پرریمارکس دیئے کہ پانی ملک کا سب سے بڑا مسئلہ ہے جسے نظر اندازنہیں کیا جا سکتا۔لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے کیس کی سماعت کی۔سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس بلانے کے لئے سمری ارسال کی گئی ہے آئین کے تحت سمری بھجوانے کے 90 یوم میں اجلاس بلانا ہوتا ہے، اس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ پانی ملک کا سب سے بڑا مسئلہ ہے مگر واٹر پالیسی کی تشکیل کے لئے 90روز کا انتظار کیا جا رہا ہے،چیف جسٹس نے مزیدکہا کہ پانی جیسے سنجیدہ مسئلہ پرکو حل نہ کیا گیا تو آئندہ آنے والی نسلیں ہمیں معاف نہیں کریں گی۔عدالت نے17جولائی کو مشترکہ مفادات کو کونسل کا اجلاس نہ بلانے کی حکومت سے وضاحت طلب کرت ہوئے ہدایت کی کہ آئندہ سماعت پر تحریری جواب داخل کرایا جائے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...