نیپالی سفیر کا ملتان کرافٹ بازار ‘ بلیوپاٹری انسٹی ٹیوٹ کا دورہ

نیپالی سفیر کا ملتان کرافٹ بازار ‘ بلیوپاٹری انسٹی ٹیوٹ کا دورہ

  

ملتان (سٹی رپورٹر) ملتان صدیوں سے کیمل سکن، بلیو پاٹری کاشی گری کا مرکز رہا ہے۔ ملتان سے ہنرمند دنیا بھر میں جاکر اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا رہے ہیں تاج محل آگرہ سمیت جنوبی پنجاب ایشیاء کے ممالک میں ملتانی ہنرمندوں نے بلیو پاٹری کاشی گری کا کام کیا ہے لیکن آج کے ہنر مند (بقیہ نمبر53صفحہ12پر )

وسائل کی کمی رابطوں کے فقدان کے باعث مالی مشکلات کا شکار ہیں اور ان کی آنے والی نسلیں اس فن کی جانب قدم بڑھانے سے گریزاں ہیں۔ ان خیالات کا اظہار نقاش عبدالرحمن، بلیو پاپڑی انسٹی ٹیوٹ کے پراجیکٹ ڈائریکٹر آصف علی اور سیکرٹری جنرل ملتان کرافٹ کونسل و ایم سی سی آئی خرم جاوید نے دورہ ملتان کے دوران سفیر سی لیو المسال ادھیکاری سے ملتان کرافٹ بازار، بلیو پاٹری انسٹی ٹیوٹ کے دورہ کے موقع پر کیا۔ بلیو پاٹری انسٹی ٹیوٹ کے دورہ کے دوران نیپالی سفیر نے مصنوعات کی تیاری کے مختلف مراحل دیکھے۔ پراجیکٹ ڈائریکٹر نے انہیں بریفنگ بھی دی جبکہ ملتان کرافٹ بازار کے دورہ کے موقع پر بلیو پاٹری، کیمل سکن، گلاس کٹ ورک سمیت دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے ہنر مندوں سے ملاقاتیں کیں اور ان کے کام کو سراہتے ہوئے بتایا کہ نیپال میں بھی پرانی عمارتوں پر ملتانی ہنرمندوں کا کام نظر آرہا ہے ہم اب پہلے کی طرح ہنرمندوں کے وفد کے تبالوں کو یقینی بنائیں گے اور ملتانی ہنرمندوں، کرافٹس مین کی مصنوعات کی نیپال میں نمائش منعقد اور تربیتی ورکشاپس بھی کرائیں گے جس سے ہمارے ہنرمند بھی آپ سے سیکھیں گے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -