مون سون کی بارشوں نے بلدیہ دینہ کی نا اہلی کی قلعی کھول دی

مون سون کی بارشوں نے بلدیہ دینہ کی نا اہلی کی قلعی کھول دی

  

دینہ(تحصیل رپورٹر) مون سون کی بارشوں نے بلدیہ دینہ کی نا اہلی کی قلعی کھول دی ، اہلیان دینہ سراپا احتجاج ، گڑھوں اور نیچی جگہوں پر بارشی پانی جمع ہونے پر خدشہ ہے مچھر ملیریا پیدا ہوگا اس کے علاوہ ڈینگی لاروا بھی جنم لے گا، بلدیہ دینہ کے ذمہ داروں کی انکوائری کروائی جائے ، عرصہ چار سال سے نالوں کی صفائی کیوں نہ کرواسکے، گیسٹرو کے مریض متعدد ہسپتالوں میں داخل ہوئے اس حوالے سے احتیاط کی انتہائی ضرورت ہے ، بلدیہ اور محکمہ صحت اپنی اپنی ذمہ اریوں کو نبھاتے ہوئے اس مسئلے پر عملی اقدامات کرے، تفصیلات کے مطابق مون سون کی بارشوں سے جہاں موسم خوشگوار ہو جاتا ہے وہاں مسائل کا پہاڑ بھی رنجیدہ کر دیتا ہے، عوام علاقہ دینہ بلدیہ کی کارکردگی پر سراپا احتجاج ہیں، بلدیہ دینہ کے قریبی گلیاں محلے گندے نالے کا منظر پیش کرتے ہیں ، خواتین ، نمازیوں کو آمدورفت میں جو دشواریاں پیش آتی ہیں کیا بلدیہ کے ذمہ دار افسران اس سنگین مسئلے سے بے علم ہیں عرصہ چار سال سے شہریوں کے بنیادی حقوق پر عدم توجہی قابل مذمت ہے، مین بازار ، منگلا روڈ کی بارش ہوتے ہی حالت انتہائی نازک صورت حال اختیار کر جاتی ہے، چیئر مین میاں عاشق کی کارکردگی قابل تعریف مگر وہ چار سال کا کچرا چار دن میں نہیں اٹھا سکتے ! گذشتہ رات ہونے والی بارش نے بلدیہ دینہ کی غفلت لا پرواہی کو سامنے لا کھڑا کیا ہے ، کمشنر راولپنڈی کو بلدیہ دینہ میں ہونے والی چار سالہ کرپشن پر نوٹس لینا چاہیے اور قواعد وضوابط کی خلاف ورزیوں پر شفاف انکوائری کروانی چاہیے تاکہ سرکاری خزانے کو نقصان پہچانے والے اورعوامی حقوق کا استحصال کرنے والوں کے چہرے بے نقاب ہوں ، ایسے کرپٹ عناصر کے خلاف کارروائی کی جائے ، عوامی سماجی رہنماؤں نے مطالبہ کیا ہے منگلا روڈ مین بازار اور دیگر محلوں گلیوں کے نالوں نالیوں کی بنیاد تک صفائی کروائی جائے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -