بھارتی ریاست گجرات میں قتل عام کے بعد مسلمانوں اور اسلام کیلئے ایسا قدم اٹھا لیا کہ جان کر آپ کا خون بھی کھول اٹھے گا

بھارتی ریاست گجرات میں قتل عام کے بعد مسلمانوں اور اسلام کیلئے ایسا قدم اٹھا ...
بھارتی ریاست گجرات میں قتل عام کے بعد مسلمانوں اور اسلام کیلئے ایسا قدم اٹھا لیا کہ جان کر آپ کا خون بھی کھول اٹھے گا

  

احمد آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام اور مسلمانوں کیخلاف بھارتی سازشیں نئی بات نہیں مگر اب ریاست گجرات کے سکولوں میں پڑھائے جانے والے نصاب میں ”صوم“ یعنی روزے کو صحت کیلئے نقصان دہ قرار دیا گیا ہے۔ 

دنیا نیوز کے مطابق بھارتی ریاست گجرات میں چوتھی جماعت کے طلبہ کو پڑھائی جانے والی کتاب میں مسلمانوں کے ماہ مقدس رمضان المبارک میں رکھے جانے والے روزوں کو ایک بیماری قرار دیا گیا ہے۔

ٹیکسٹ بک میں ایک مضمون لکھا گیا ہے جس میں کہا گیاہے کہ روزہ دراصل ایک بیماری ہے جس سے دست ، قے اور اسہال کی صورت حال پیدا ہوتی ہے ۔ بھارتی حکومت کے اس اقدام پر مسلمانوں میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے اور مسلم تنظیموں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے اس مضمون کو جلد از جلد نکالنے کا مطالبہ کیا ہے۔

گجرات ٹیکسٹ بک بورڈ کے چیئرمین نیتن پیتھانی نے اسے پرنٹنگ کی غلطی قرار دیتے ہوئے جان چھڑانے کی کوشش کی ہے۔ ان کا ایک بیان میں کہنا ہے کہ یہ مضمون ہیضہ کی بیماری پر لکھا گیا تھا تاہم

پرنٹنگ کی غلطی کی وجہ سے اس لفظ کو ”روزہ“ لکھ دیا گیا۔ یہ مضمون 2015ءسے نصاب میں شامل ہے لیکن پرانے ایڈیشن میں ایسی کوئی غلطی نظر نہیں آئی۔

مزید :

بین الاقوامی -