’ان افغانیوں کو امریکہ آنے دو‘ وہ افغانی شہری جن کا امریکی ویزا مسترد ہوا تو ٹرمپ خود میدان میں آگئے، یہ افغانی کون تھے؟ جان کر آپ کی حیرت کی بھی انتہا نہ رہے گی

’ان افغانیوں کو امریکہ آنے دو‘ وہ افغانی شہری جن کا امریکی ویزا مسترد ہوا تو ...
’ان افغانیوں کو امریکہ آنے دو‘ وہ افغانی شہری جن کا امریکی ویزا مسترد ہوا تو ٹرمپ خود میدان میں آگئے، یہ افغانی کون تھے؟ جان کر آپ کی حیرت کی بھی انتہا نہ رہے گی

  


کابل (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے کسی اچھے کام کا ذکر آپ نے کم ہی سنا ہو گا لیکن امریکہ میں منعقد ہونے والے ایک عالمی مقابلے کیلئے روبوٹ تیار کرنے والی افغانی لڑکیوں کو امریکی حکام نے ویزا دینے سے انکار کیا تو ٹرمپ ان کی مدد کے لئے خود میدان میں آ گئے۔

ویب سائٹ ’پولیٹیکو‘ کی رپورٹ کے مطابق افغانستان میں کام کرنے والے پرائیویٹ ٹریننگ انسٹیٹیوٹ ’افغانستان روبوٹک ہاﺅس‘ کے زیر سایہ چھ انتہائی قابل افغانی لڑکیوں نے عالمی مقابلے میں شرکت کیلئے ایک روبوٹ تیار کیا تھا لیکن امریکی حکومت نے ان لڑکیوں کو ویزا دینے سے انکار کردیا تھا۔ ہرات شہر سے تعلق رکھنے والی لڑکیوں کو امریکی حکام کی جانب سے انکار کیا گیا تو عالمی سطح پر امریکہ کو سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

کیا آپ بتاسکتے ہیں سوشل میڈیا پر ہزاروں صارفین کے دل جیتنے والی ان 3 بہنوں کی عمریں کیا ہیں؟ جواب جان کر آپ کا منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

امریکہ کے ڈیپارٹمنٹ آف ہوم لینڈ سکیورٹی کو ان لڑکیوں کو ویزا جاری کرنے پر اعتراض تھا جس پر سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ نے بھی ان لڑکیوں کی قابلیت اور محنت کو مکمل طور پر نظر انداز کرتے ہوئے انہیں ویزا دینے سے انکار کردیا تھا۔ جب ہر جانب سے سخت تنقید شروع ہوگئی تو بالآخر صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو مداخلت کرنا پڑی، جن کے کہنے پر اب ان لڑکیوں کو ویزا جاری کردیا گیا ہے۔

صدر ٹرمپ کی نائب قومی مشیر برائے سٹریٹجی ٹینا پاول کا کہنا تھا ”ہمارے لئے اس سے زیادہ قابل فخر بات کوئی نہیں ہوسکتی کہ ہم افغانستان کی ان ذہین ترین لڑکیوں کو، جو کہ سائنسدان بھی ہیں، اپنے ہاں خوش آمدید کہیں گے۔ یہ افغانستان کے مستقبل کی رہنما ہیں اور اپنے ملک کی بہترین سفیر بھی۔“

یاد رہے کہ اس سے پہلے امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ ان لڑکیوں کے ویزے کی درخواست دو بار رد کرچکا ہے۔ افغان میڈیا کے مطابق یہ لڑکیاں ہرات صوبے سے انتہائی مشکل اور پرخطر سفر کرکے دو بار افغان دارالحکومت گئیں لیکن امریکی حکام نے ان کی ویزا کی درخواست قبول نہ کی، جبکہ اس فیصلے کی کوئی مناسب وجہ بھی بیان نہیں کی گئی تھی۔

انٹرنیشنل روبوٹ مقابلہ ’فرسٹ گلوبل چیلنج‘ 16 سے 18 جولائی تک امریکی دارالحکومت میں منعقد ہوگا۔ افغان لڑکیوں کا تیار کردہ روبوٹ مقابلے میں شرکت کے لئے ان سے پہلے ہی امریکا پہنچ چکا ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...